پاکستانی لڑاکا طیارہ جے ایف 17 تھنڈر امریکی ایف 16 کا متبادل بن گیا

پاکستانی لڑاکا طیارہ جے ایف 17 تھنڈر امریکی ایف 16 کا متبادل بن گیا
پاکستانی لڑاکا طیارہ جے ایف 17 تھنڈر امریکی ایف 16 کا متبادل بن گیا

  

اسلام آباد (ڈی این اے )پاکستانی ساختہ جدیدترین جنگی لڑاکاطیارے نے پاک فضاﺅں کومحفوظ تربنادیا۔ آسمان کی وسعتوں میں اڑان بھرنے والی اس دوستی کی جدید ترین مثال جے ایف 17 تھنڈر لڑاکا طیارہ ہے۔تفصیلات کے مطابق جے ایف 17 تھنڈر طیارہ چین کی مدد سے پاکستان میں بنایا گیا۔ یہ لڑاکا طیارہ نہ صرف جدید ترین ہے بلکہ وزن میں بھی بے حد ہلکا ہے۔ اس پھرتیلے فضائی محافظ کی شمولیت نے پاکستان ایئر فورس کی آپریشنل ڈاکٹرائن کو مکمل طور پر بدل کر رکھ دیا ہے۔جے ایف 17 تھنڈر سمارٹ فائٹر کی کل لمبائی 14 اعشاریہ 26 اور اونچائی 4 اعشاریہ 775 میٹرہے۔ اس کے پر 9 میٹر طویل ہیں۔ یہ جنگی طیارہ 9 ہزار ایک سو کلوگرام سے لے کر 12 ہزار 400 کلوگرام تک وزنی ہر قسم کے روایتی اور غیر روایتی ہتھیاروں کے ساتھ ایک ہزار دو سو18 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے اڑان بھر سکتا ہے۔جے ایف 17 تھنڈر کی ایک بڑی خوبی یہ بھی ہے کہ یہ محض 823 میٹر کے چھوٹے رن وے پر لینڈنگ اور 610 میٹر کے مختصر تین رن وے سے ٹیک آف کر سکتا ہے۔جے ایف 17 تھنڈر کی شمولیت کے بعد پاک فضائیہ نے امریکی و فرانسیسی ساختہ جنگی طیاروں میراج تھری، مگ 21 اور ایف فائیو کو خیرباد کہنا شروع کر دیا ہے۔اگلے پانچ برسوں کے دوران مزید 200 جے ایف 17 تھنڈر طیارے ایئر فورس کے فضائی بیڑے میں شامل ہو جائینگے۔

مزید : اسلام آباد