بھارت نے 50ارب ڈالر ایک ایسے ملک کو دینے کا اعلان کر دیا جس پر امریکہ آگے ہی بہت مہربان ہے

بھارت نے 50ارب ڈالر ایک ایسے ملک کو دینے کا اعلان کر دیا جس پر امریکہ آگے ہی ...
بھارت نے 50ارب ڈالر ایک ایسے ملک کو دینے کا اعلان کر دیا جس پر امریکہ آگے ہی بہت مہربان ہے

  


نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک)بحرجنوبی چین کی ملکیت کا تنازع تو چین، ویت نام، فلپائن و دیگر ممالک کے درمیان ہے مگر امریکہ اس تنازعے میں بلاوجہ مداخلت کرکے چین کو زچ کرنے کی کوششوں میں مصروف تھا۔ اب بھارت بھی امریکہ کی تقلید میں اس ڈگر پر چل نکلا ہے۔ انڈین ایکسپریس کی رپورٹ کے مطابق بھارت نے ویت نام کو دفاعی تعاون کی مد میں50کروڑ ڈالر(تقریباً 50ارب روپے) قرض دینے کا اعلان کر دیا ہے۔ اس موقع پر بھارت اور ویت نام کے مابین 12معاہدوں پر دستخط کیے گئے ہیں جن میں ایک معاہدہ بھارتی بحریہ کے بحر جنوبی چین میں گشت کے متعلق بھی ہے۔ اس معاہدے کے تحت ویت نام بھارت کو بحرجنوبی چین میں گشت کے لیے تعمیرات کی اجازت بھی دے گا۔ یہ معاہدے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی سے ان کے ویت نامی ہم منصب کی ملاقات کے درمیان طے پائے۔ اس موقع پر نریندر مودی کا کہنا تھا کہ ”دونوں ممالک نے اپنے سٹریٹجک تعلقات کو فروغ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ حالیہ معاہدے ہمارے باہمی تعاون کے مستقبل کا تعین کریں گے۔ اس سے ہماری شراکت داری کو نئی جہت ملے گی اور اس میں تیزی آئے گی۔“اس سے قبل ویت نام صرف چین اور روس کا سٹریٹجک پارٹنر تھا۔ نریندرمودی کا کہنا تھا کہ ”مجھے خوشی ہے کہ ویت نام کے ساتھ ہماری شراکت داری میں وسعت آئی ہے اور میں اس کے لیے 50کروڑ ڈالر قرض کا اعلان کرتے ہوئے بھی خوشی محسوس کر رہا ہوں۔ اس سے ہمارا دفاعی تعاون مزید مضبوط ہو گا۔“

مزید : بین الاقوامی