پی ٹی آئی کا احتساب مارچ ناکام بنانے کیلئے 300کنٹینر ز کے استعمال کا انکشاف

پی ٹی آئی کا احتساب مارچ ناکام بنانے کیلئے 300کنٹینر ز کے استعمال کا انکشاف

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف نے ہفتہ کے روز شاہدرہ سے چیئرنگ کراس تک احتساب مارچ نکالا جس میں لوگوں کو شرکت کرنے سے روکنے کیلئے پنجاب حکومت نے بڑی تعداد میں کنٹینرز لگا کر پورے شہر کو نو گو ایریا بنادیا ۔ ضلعی انتظامیہ نے شہر بھر میں مختلف ٹرانسپورٹ کمپنیوں کے کنٹینرز زبردستی قبضہ میں لے کر کھڑے کیے جس کے سبب ٹرانسپورٹرز کو 4 کروڑ روپے سے زائد کا نقصان ہوا۔تفصیلات کے مطابق ہفتہ کے روز پی ٹی آئی کا احتساب مارچ ناکام بنانے کیلئے انتظامیہ کی جانب سے 300 سے زائد کنٹینرز استعمال کیے گئے۔ یہ تمام کنٹینرز نجی کمپنیوں کے تھے جنہیں پولیس نے زبردستی شہر کے مختلف علاقوں میں کھڑا کردیا۔ اس دوران سڑکیں بند کرنے کیلئے 40 سے 60 فٹ کے کنٹینرز بھی قبضے میں لیے گئے تھے۔ ٹرانسپورٹرز کا کہنا ہے کہ وہ لاہور سے کراچی کیلئے کنٹینر کا یکطرفہ کرایہ 1 لاکھ 20 ہزار سے ڈیڑھ لاکھ روپے تک وصول کرتے ہیں جبکہ لاہور سے پشاور کا یکطرفہ کرایہ 35 سے 50 ہزار روپے تک وصول کرتے ہیں۔ لاہور کی ضلعی انتظامیہ کی جانب سے 7 ہزار روپے فی کنٹینر کرایہ ادا کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی ہے تاہم اس سے ٹرانسپورٹرز کو 4 کروڑ روپے سے زائد کا نقصان ہوگا۔

کنٹینر

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر