کورونا وباء سے تباہ حال ٹریول ٹریڈ کیساتھ ٹورازم ڈپارٹمنٹ کاسوتیلی ماں جیسا سلوک 

  کورونا وباء سے تباہ حال ٹریول ٹریڈ کیساتھ ٹورازم ڈپارٹمنٹ کاسوتیلی ماں ...

  

لاہور (میاں اشفاق انجم سے) ٹریول ٹریڈ کو 5ارب ڈالر کے نقصان کا سامنا، 6ماہ سے عمرہ اور ائیرلائنز آپریشن معطل ہونے کے بعد ملک بھر میں سیکڑوں دفاتر بند ہو چکے ہیں اس سال حج نہ ہونے کی وجہ سے ٹریول ٹریڈ کے بعد ٹورز آپریٹر کا بھی معاشی دیولیہ نکل چکا ہے،ہزاروں افراد بیروزگار ہو چکے ہیں۔ کراچی، پشاور، لاہور، سرگودھا، فیصل آبادچیمبر آف کامرس کی حج و عمرہ ٹریول کمیٹیاں، وزیر اعظم اور چاروں وزائے اعلیٰ سے ریلیف کا مطالبہ کر چکے ہیں،مگرابھی تک پروفیشنل اور انکم ٹیکسز کی چھوٹ ملی،نہ ہی ٹورزمِ کی سالانہ لا ئسنس فیس کی معافی دی گئی ہے،حالانکہ لاہور چیمبر آف کامرس کی حج و عمرہ کمیٹی کی درخواستوں پر پنجاب کے ٹریول ایجنٹ کوٹورازم ِ کی سالانہ رنیول فیس 20ہزار ایک سال کیلئے معاف کرنے کی خبر شائع کروائی گئی مگر عملی طور پر نوٹیفکیشن جاری نہ ہو سکا۔ ٹورازم کا دفتر جو کورونا وباء کے دنوں میں 5ماہ بند رہا۔ وزیر اعظم، وزیر اعلیٰ نے احکامات جاری کیے ان د نو ں ختم ہونیوالے لائسنس کو مہلت دی جائے۔مگر پنجاب ٹورزمِ میں الٹی گنگا بہہ رہی ہے۔ جہاں کورونا کے دنوں میں دفاتر بند ہونے کے باوجود، قصور ٹریول ایجنٹ کو نکال کر انہیں لیٹ فیس کی مد میں 5ہزار روپے جرمانہ کیا جارہا ہے، ٹریول،عمرہ، حج، انڈسٹریز کے 5ارب ڈالر سے زائد کے نقصان کے ازلہ کیلئے اب تک کوئی اقدام نہیں کیا گیا۔ ٹریول، عمرہ، حج کی صنعت سے وابستہ ہزاروں افراد کو احساس پروگرام میں شامل کرنے کے مطالبہ بھی اب تک تسلیم نہیں ہوا، ٹورازم انڈسٹریز تباہی کے دہانے پر پہنچ چکی ہے، پنجاب کے ٹریول ایجنٹ نے وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ پنجاب سے ٹورزمِ ڈپارٹمنٹ کے ذمہ داران کے ناروا روایہ کا نوٹس لینے، ایک سال کیلئے رینول فیس،انکم ٹیکس،پروفیشنل ایاٹا فیس معاف کرنے کا مطالبہ کیا ہے اور ساتھ ہی وزیر اعظم اور وزیر خزانہ سے ٹریول ٹریڈ اور عمرہ و حج کی صنعت کو بچانے کے لیے فوری ریلیف پیکج دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ 

ٹریول ٹریڈ 

مزید :

صفحہ آخر -