سعودیہ کے بعد بحرین نے بھی اسرائیل کو فضائی حدود استعمال کرنیکی اجازت دیدی 

  سعودیہ کے بعد بحرین نے بھی اسرائیل کو فضائی حدود استعمال کرنیکی اجازت ...

  

 بیت المقدس، مانامہ(آن لائن)اسرائیل کی سرکاری ایئر لائن ایل ایل نے دبئی کے لیے پہلی کارگو پرواز کی روانگی کا اعلان کر دیا۔ اسرائیلی سرکاری ایئرلائن نے جاری بیان میں کہا ہے کہ تل ابیب کے قریب قائم ایئرپورٹ سے 16 ستمبر کو پہلی کارگو پرواز یواے ای روانہ ہوگی۔ امارات جانے والے بوئنگ 747 طیارے میں زرعی اور ہائی ٹیک آلات ہوں گے، یہ پرواز بیلجیئم کے راستے دبئی پہنچے گی تاہم مستقبل میں مذکورہ روٹ کی تبدیلی متوقع ہے۔یہ کارگو پروازیں ہر ہفتے اسرائیلی کمپنیوں کے لیے درآمدات اور برآمدات کے سامان کے ساتھ دبئی کے لیے اڑان بھریں گی۔دوسری جانب سعودی عرب کے بعد ایک اور عرب ریاست، بحرین نے بھی متحدہ عرب امارات (یو اے ای) آنے والی اسرائیلی پروازوں کو فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت دیدی ہے۔ بحرین نے ایک جاری بیان میں کہاہے کہ متحدہ عرب امارات سے آنے اور جانے والی تمام پروازوں کو فضائی راستہ استعمال کرنے کی اجازت ہوگی۔ یہ بیان بحرین کی سرکاری نیوز ایجنسی (بی این اے) کی جانب سے جاری کیا گیا، جس میں سعودی عرب ہی کی طرح اسرائیل کا نام استعمال نہیں کیا گیا۔تاہم بحرین کا یہ اعلان سعودی عرب کی جانب سے گزشتہ دونوں اسرائیل کی کمرشل فلائٹ کو تل ابیب سے متحدہ عرب امارت پرواز کے لیے فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت دینے کے بعد سامنے آیا ہے۔بیان میں بحرین کی جانب سے ان کے حریف ممالک، جن میں ایران اور قطر شامل ہیں، کے حوالے سے کوئی ذکر سامنے نہیں آیا، سعودی عرب اور امارات نے مذکورہ ممالک کا بائیکاٹ کر رکھا ہے۔خیال رہے کہ بحرین اور متحدہ عرب امارات کے درمیان پروازیں قطر کے شمالی فضائی راستے سے گزرتی ہیں کیوں کہ دوحہ نے ان ممالک کی جانب سے بائیکاٹ کیے جانے کے بعد مذکورہ ممالک کے لیے اپنی فضائی حدود بند کردی تھیں۔ادھر ایران کی جانب سے متحدہ عرب امارات آنے والی پروازیں بحرین کی فضائی حدود استعمال نہیں کرتیں کیوں کہ یہ ریاست خلیج فارس میں سعودی عرب کے ساحل کے قریب ایک جزیرہ ہے۔

بحرین اجازت 

مزید :

صفحہ اول -