حاصل پور میں آٹا نایاب‘ مختلف مقامات  پر بلیک میں فروخت‘ نوٹس لینے کا مطالبہ

   حاصل پور میں آٹا نایاب‘ مختلف مقامات  پر بلیک میں فروخت‘ نوٹس لینے کا ...

  

حاصل پور(نامہ نگار)حاصل پور میں حکومتی دعوں کے باوجود آٹے کا (بقیہ نمبر36صفحہ 6پر)

بحران ختم نہ ہو سکا دیہاڑی دار طبقہ غریب لوگ مہنگے داموں آٹا خریدنے پر مجبور فلور ملز مالکان کا انتظامیہ کے ساتھ ایکا سرکاری نرخ پر آٹا 860روپے 20کلو تھیلی غیرمعیاری مضر صحت نمی والا دوکانوں پر سپلائی بند آٹا غائب جب کہ مخصوص لوگوں کو ملز مالکان سبسڈی والا آٹا سپلائی کرتے ہیں چکیوں پر تقریبا 70روپے کلو آٹا فروخت کیا جا رہا ہے ملز مالکان نے مہنگے داموں 20کلو والی تھیلی دوکانداروں کو 1300روپے میں فروخت کر رہے ہیں جبکہ سرکاری ڈپیوں کے علاوہ یوٹیلٹی سٹورز سے بھی آٹا غائب مقامی انتظامیہ کی طرف سے مانیٹرنگ چیک آپ بلنس نہ ہونے سے دوکانداروں فلور ملزمالکان آٹا کا بحران پید کر کے مہنگے داموں فروخت کر رہے ہیں مضر صحت آٹا استعمال کرنے لوگوں میں مختلف بیماریاں پھیل رہی ہیں مقامی پرائس کنڑول کمیٹیاں مجسٹرٹیٹوں کی کارکردگی دفتروں اور ٖاڑیوں کی سیر تک محدود یہاں کے عوامی سماجی حلقوں کے علاوہ خان محمد منیر عباسی، چوہدری محمدمحبوب پپو، ملک سعید احمد چنڑ، محمد ثاقب غوری، خان محمد مختار نربان، صابر علی چوہان نے میڈیا کو ایک سروے میں کیا انہوں نے کہاکہ قائم پور، جمال پور، چھوناوالا اور دیہی علاقوں میں آٹا کی قلت ہے اور فلور ملزمالکان آٹا سپلائی نہیں کر رہے ہیں انہوں نے وزیراعلیٰ پنجاب اورانتظامیہ سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے 

آٹا نایاب

مزید :

ملتان صفحہ آخر -