بڑھتی وارداتوں کیخلاف تاجروں کا احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان 

    بڑھتی وارداتوں کیخلاف تاجروں کا احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان 

  

ملتان (نیوز رپورٹر) مرکزی تنظیم تاجران پاکستان کے مرکزی چیئرمین خواجہ سلیمان صدیقی نے ملتان شہر و گردونواح میں ڈکیتی، قتل و غارت اور چوری کی بڑھتی ہوئی (بقیہ نمبر8صفحہ 6پر)

وارداتوں کے خلاف احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ تاجر برادری پولیس حکام کی مجرمانہ چشم پوشی و غیرذمہ دارانہ روش سے عدم تحفظ کا شکار ہوچکی ہے پولیس حکام کی طفل تسلیوں کے باوجود وزیر اعلی پنجاب کے معاون خصوصی و رکن صوبائی اسمبلی تاجر رہنما حاجی جاوید اختر انصاری کی رہائش گاہ پر فائرنگ میں ملوث جرائم پیشہ عناصر کا گرفتار نہ ہونا ضلعی انتظامیہ و پولیس حکام کی پیشہ وارانہ کارکردگی پر بہت بڑا سوالیہ نشان ہے ضلعی انتظامیہ نے 24 گھنٹے کے اندر فائرنگ کے واقعہ میں ملوث ذمہ داروں کو گرفتار نہ کیا گیا تو مرکزی تنظیم تاجر ان پاکستان احتجاجی تحریک کا آغاز کرے گی ان خیالات کا اظہار انہوں مرکزی تنظیم تاجران پاکستان کے دیگر عہدیداران،صدر جنوبی پنجاب شیخ جاوید اختر، ضلعی صدر سید جعفر علی شاہ، جاوید اخترخان، ذیشان صدیقی، کاشف رفیق حافظ عمران سجاد قریشی،ندیم شیخ، اکمل بلوچ،صرفراز قادری، ناصر محمود چوہان کے ہمراہ پریس کلب میں پریس کانفرنس کے دوران کیا خواجہ سلیمان صدیقی نے مزید کہا کہ ڈی ایس پی شاہ رکن عالم، ایس ایچ اوز دہلی گیٹ، شاہ رکن عالم، دولت گیٹ ڈاکوؤں، چوروں اور سنگین مقدمات میں ملوث جرائم پیشہ عناصر کی سرپرست بن چکی ہیں جنہوں نے نہ صرف تاجر برادری بلکہ عام شہری کی زندگی اجیرن کرکے رکھ دی ہے جہاں ایک حکومتی ایم پی اے حاجی جاوید اختر انصاری کی رہائش گاہ پر فائرنگ میں ملوث نامزد ملزمان کو چار روز گزر جانے کے باوجود گرفتار نہیں کیاجاسکا ہے وہاں عام آدمی کو کیاانصاف ملنے کی توقع کی جاسکتی ہے انہوں نے انکشاف کیا کہ حاجی جاوید اختر انصاری کو سنگین مقدمات میں ملوث جرائم پیشہ عناصر نے اپنی سرپرستی پر زور دیا جب انہوں نے انکار کیا تو ان کے گھر میں میری موجودگی کے دوران دہلی گیٹ کے علاقہ میں جرائم پیشہ عناصر نے فائرنگ کردی اور چادر و چار دیواری کا تقدس پامال کیا تاہم ہم بال بال بچ گئے انہوں نے کہا کہ 25لاکھ کی آبادی پر مشتمل چند مٹھی بھر جرائم پیشہ عناصر نے پورے ملتان شہر کو یرغمال بنا رکھا ہے لیکن انہیں پوچھنے والا کوئی نہیں ہے جو دن دیہاڑے شرفاء  کی پگڑیاں اچھالتے ہیں اور ان کے گھروں میں گھس جاتے ہیں تشدد کا نشانہ بناتے ہیں اور فائرنگ کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ افسوسناک صورتحال یہ ہے کہ ڈی ایس پیز گلگشت، شاہ رکن عالم، ایس ایچ اوز دہلی گیٹ، شاہ رکن عالم، دولت گیٹ جرائم پیشہ عناصر کو لمحہ لمحہ کی خبر سے باخبر رکھتے ہیں او ران کے گرفتاریوں کی بجائے موبائلز بند کرنے کی رٹ لگاتے ہیں لیکن مرکزی تنظیم تاجران پاکستان تاجربرادری اور عام شہریوں کو تنہا نہیں چھوڑے گی اگر ملتان و گردونواح کو جرائم پیشہ عناصر سے پاک نہ کیا گیا تو مرکزی تنظیم تاجران پاکستان احتجاجی مظاہروں، دھرنوں، شٹرڈاؤن پر مجبور ہو جائے گی جس کی ذمہ دار ضلعی انتظامیہ کے حکام بالا ہوں گے۔ 

کانفرنس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -