اسلام نے حجاب سے معاشرے کوحسن بخشا ہے‘ ڈاکٹر ثمینہ روحی 

  اسلام نے حجاب سے معاشرے کوحسن بخشا ہے‘ ڈاکٹر ثمینہ روحی 

  

  بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)جماعت اسلامی جنوبی پنجاب (حلقہ خواتین) سیاسی امور کی صدر ڈاکٹر ثمینہ روحی اور ضلعی ناظمہ فرح اشفاق نے 4ستمبر عالمی یوم حجاب (بقیہ نمبر14صفحہ 6پر)

کے موقع پر اپنے بیان میں کہاہے کہ مغرب اور یورپ میں خواتین کا بدترین استحصال ہورہاہے۔ اسلام نے عورت کو جو عزت و وقار کا رتبہ بخشا ہے، وہ کسی دوسرے مذہب میں نہیں۔ اسلام نے عورت کو وراثت میں حق اور ماں بہن بیٹی اور بیوی کی حیثیت سے احترام دیاہے۔ مغرب اور یورپ میں عورت کو مارکیٹ کی چیز بنا کر پیش کیا گیا جس کی وجہ سے عورت عزت و حرمت اور وقار سے محروم ہوگئی۔ چھوٹی عمر کی بچیوں کے ساتھ ہونے والے عصمت دری کے واقعات، لاکھوں بن بیاہی ماؤں کیلئے ان کی پوری زندگی عذاب بنا دی جاتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ عورت پر ہونے والے ظلم وزیادتی کی جو چشم کشا ر پورٹس مغربی اور یورپی میڈیا کی زینت بنتی ہیں انہیں دیکھ کر مغرب کی عورت پر ترس آتاہے۔ عورتوں پر ہونے والے ظلم و جبر اور زیادتی کے واقعات کے 85 فیصد مقدمات ہی درج نہیں ہوتے۔ جو پندرہ فیصد مقدمات درج ہوتے ہیں ان میں سے بھی اکثر کو انصاف نہیں ملتا اور وہ عدم پیروی کی وجہ سے خارج ہو جاتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ حجاب اور پردے نے مسلمان عورت کو جو وقار دیا ہے، اس نے مسلم معاشرے کو ایک حسن بخشا ہے جبکہ مغرب اور یورپ کے معاشرے میں جرائم بڑھ رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ایک پرامن اور باوقار معاشرے کی تشکیل کیلئے عورت کے مقام و مرتبے کا تحفظ انتہائی ناگزیر ہے۔ بے حجاب معاشروں میں عورت غیر محفوظ ہے اور جرائم مسلسل بڑھ رہے ہیں جبکہ باحجاب معاشروں میں نہ صرف عورت کو تحفظ حاصل ہے، بلکہ معاشرے میں جرائم کی شرح بھی مسلسل کم ہو رہی ہے۔ 

ڈاکٹر ثمینہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -