پی سی پی میں منیجنگ ڈائریکٹر کی عدم تعیناتی کے باعث شدید مالی نقصان کا اندیشہ

 پی سی پی میں منیجنگ ڈائریکٹر کی عدم تعیناتی کے باعث شدید مالی نقصان کا ...

  

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی) پرنٹنگ کارپوریشن آف پاکستان جو کہ ایک قومی ادارہ ہے۔ اس کے سابق منیجنگ ڈائریکٹر آصف خان مورخہ 28مئی2020کو اپنی مدت ملازمت پوری کرنے پر ریٹائرہو گئے۔ آل پاکستان پی  سی پی ورکرز یونین (رجسٹرڈ) CBAکے جنرل سیکرٹری چوہدری بلال محمود نے بتایا کہ MDپی سی پی کی ریٹائر منٹ کے بعد 3ماہ سے زائد عرصہ گزر چکا ہے۔ ابھی تک حکومت کی  طرف سے منیجنگ ڈائریکٹر کی تعیناتی نہیں کی گئی۔ جس کی  وجہ سے پی سی پی میں مالی بحران پیدا ہونے کا خدشہ ہے۔ کیونکہ ادارہ ہذا میں جو کام پرنٹنگ کے لیے آیا ہو ہے۔ اور جو آرہا ہے اس پر useہونے والے میٹیریل کی خریداری کے لیے Approvalمنیجنگ ڈائریکٹر نے دینی  ہوتی  ہے۔منیجنگ ڈائریکٹر کی عدم تعیناتی کے باعث پرنٹنگ کے تمام کام Pendingپڑے ہوئے ہیں جبکہ ملک میں بلدیاتی الیکشن اور گلگت بلتستان کے الیکشن ہونے ہیں اور ان کے بیلٹ پیپرز کی تیاری پی  سی پی میں ہونی ہے۔ اور الیکشن کمیشن کے ساتھ الیکشن میٹریل کی تیاری کے معاملات طے کرنے کے لیے MDہی کی ذمہ داری ہے۔ ادارہ میں کام کرنے والے ورکرز کے واجبات کئی ماہ  سے رکے ہوئے ہیں۔ جس کی وجہ سے ورکرز  میں بھی مایوسی پیدا ہو گئی ہے۔ اس کے علاوہ پی سی پی میں آفیسرز کی اہم ترین پوسٹیں ایک طویل عرصے سے خالی پڑی ہیں۔ جن میں ڈائریکٹر فنانس۔سیکرٹری۔ڈپٹی سیکرٹری آڈٹ آفیسر اور جنرل منیجر پروڈکشن شامل ہیں۔آل پاکستان پی سی پی ورکرز یونین (رجسٹرڈ)CBAکے جنرل سیکرٹری چوہدری بلال محمودنے وزیراعظم پاکستان جناب عمران خان صاحب مشیر برائے پارلیمانی امور ڈاکٹر بابر اعوان صاحب، کیبنٹ سیکرٹری صاحب اور اسٹیبلشمنٹ سیکرٹری صاحب سے مطالبہ کیا ہے کہ MDکی تعیناتی نہ ہونے کے باعث ادارہ شدید قسم کے مسائل کا شکار ہو چکا ہے۔ اور ادارہ میں شدید مالی بحران کا اندیشہ ہے۔اس لیے پی سی پی میں فی الفورمنیجنگ ڈائریکٹر کی تعیناتی فرمائی جائے۔ تاکہ پی  سی پی کسی بڑے مالی نقصان سے بچ سکے۔

مزید :

صفحہ آخر -