کراچی کو سونے کی مرغی سمجھ کر سب نے انڈے کھائے لیکن ۔۔۔حلیم عادل شیخ نے سندھ حکومت پر تنقید کرتے ہوئے ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی تائید کریں گے

 کراچی کو سونے کی مرغی سمجھ کر سب نے انڈے کھائے لیکن ۔۔۔حلیم عادل شیخ نے سندھ ...
 کراچی کو سونے کی مرغی سمجھ کر سب نے انڈے کھائے لیکن ۔۔۔حلیم عادل شیخ نے سندھ حکومت پر تنقید کرتے ہوئے ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی تائید کریں گے

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اورسندھ اسمبلی میں پارلیما نی لیڈر حلیم عادل شیخ نے کہا ہے کہ ، کراچی کو سونے کی مرغی سمجھ کر سب نے انڈے کھائے لیکن شہر قائد کی ترقی کے لئے کسی نے کام نہیں کیا، بلاول بھٹو زرداری  نے کہا 800 ارب کے پروجیکٹ سندھ حکومت کے کراچی میں چل رہے ہیں، ہم تلاش کر کر کے تھک گئےہیں لیکن زمین پر کوئی پروجیکٹ نظر نہیں آیا،وزیر اعظم عمران خان نے کراچی کے لئے 1100 ارب کا تاریخی پیکیج دیا ،آج صوبہ سندھ کے لئے تاریخی دن ہے۔

تفصیلات کے مطابق حلیم عادل شیخ کا کہنا تھا کہ شہر قائد کو   گذشتہ بارہ سالوں میں تباہی کی طرف لے جایا گیا ،کراچی کو کچرہ کنڈی بنا دیا گیا ہے،کوئی کام کرنے کو تیارہی نہیں ہے،شہر میں حالات خراب،راستے تباہ،سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار،گٹر ابل رہے ہیں،ٹرانسپورٹ نہ ہونے کے برابر،ہسپتالوں کا برا حال جبکہ عوام کو پینے کا پانی بھی نہیں ملتا لیکن سندھ حکومت ہے کہ وہ اپنی کارکردگی پر شرمندہ بھی نہیں ہوتی۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان نے کراچی کے لئے 1100 ارب کا تاریخی پیکیج دیا ہے جس پر پورا کراچی کپتان کا شکریہ ادا کرتا ہے، آج جو لکیر پیٹ رہے تھے کہ دو سالوں میں کام نہیں ہوا اب اُن کو پتہ لگے گا کہ کس طرح کام کیا جاتا ہے؟۔انہوں نے کہا کہ بلاول بھٹو زرداری نے دعویٰ کیا ہے کہ800 ارب کے پروجیکٹ سندھ حکومت کے کراچی میں چل رہے ہیں، ہم تلاش کر کر کے تھک گئے ہیں لیکن ہمیں زمین پر  کوئی پروجیکٹ نظر نہیں آیا،صوبائی حکومت  نے اس سال کے بجٹ بک میں بھی صرف تیس ارب روپے کراچی کے لئے رکھےہیں،وفاقی حکومت نے احساس کیش پروگرام میں 60 ارب سندھ کو دیئے اس کے علاوہ 1200 ارب میں بھی کراچی کو بہت بڑا حصہ دیا گیا تھا۔

حلیم عادل شیخ نے کہا کہ اب کراچی کے حالات بدلنے جا رہے ہیں اوراب سارے مسائل حل ہونگے، کراچی چلے گا تو صوبہ چلے گا اور ملک خوشحال ہوگا۔ جن لوگوں نے کراچی کو تباہ کی ان کو سوچنا چاہیے تھا۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -