الیکشن ملتوی نہیں ہونا چاہئے ، انتخابی عملہ اور سیاستدان ’عقل‘ کریں :انسانی حقوق کمیشن

الیکشن ملتوی نہیں ہونا چاہئے ، انتخابی عملہ اور سیاستدان ’عقل‘ کریں :انسانی ...
الیکشن ملتوی نہیں ہونا چاہئے ، انتخابی عملہ اور سیاستدان ’عقل‘ کریں :انسانی حقوق کمیشن

  

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان کمیشن برائے انسانی حقوق (ایچ آر سی پی) نے امیدواروں کو انتخابات سے باہر کرنے اور اپنی پسند کے امیدواروں کے چناو¿ اور ان کا احتساب کرنے کی عوامی صلاحیت پر ہونے والے معاندانہ حملے پر شدید تشویش کا اظہار کیا ہے۔ہفتہ کو اپنے اجلاس کے اختتام پر ایچ آر سی پی کی ایگزیکٹو کونسل نے ایک بیان میں کہا ’یہ بات واضح ہے کہ امیدواروں کی چھانٹ کا حالیہ عمل بے بنیاد الزام تراشی ہے جس کامقصد امیدواران کو ہراساں کرنا اور ان کی تضحیک کرنا ہے۔ اس سے جمہوریت کی اصل ر±وح شدید متاثر ہورہی ہے اور یہ اپنے نمائندے منتخب کرنے کے عوام کے حق اوراستعداد کو تسلیم نہ کرنے کے مترادف ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ایچ آر سی پی اس حقیقت کا اعتراف کرتا ہے کہ سیاسی جماعتیں نگران حکومت کی تشکیل سمیت ان تمام مشکل ذمہ داریوں کو بخوبی سرانجام دے سکتی ہیں جو ان پر یکے بعد دیگر عائد کی گئیںتاہم آج ہم جس موڑ پر کھڑے ہیں اس کا بنیادی سبب ان سیاسی حکومتوں کی جانب سے ان ریاستی اداروں کی عملی سیاست میں واضح مداخلت کے ادراک سے چشم پوشی ہے جن کا اِس میدان سے کوئی سروکار نہیں ۔ اسی وجہ سے جمہوری عمل آج غیر نمائندہ گروہوں اور اداروں کے مخصوص مفادات کے تابع ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی عوام شفاف اورمذہب زدگی پر مبنی انتخابات میں فرق کو اچھی طرح سمجھتے ہیں۔ گزشتہ چند دنوں کے دوران امیدواروں کے ہونے والے چناو¿ نے شدید تحفظات کو جنم دیا ہے۔ ریٹرننگ افسران کی مکمل من مانی سے امیدواروں کو نااہل قرار دینا ہدایات اور شہہ کے بغیر ممکن نہیں ہوسکتا۔اس سارے عمل کا مقصد عوام کی رائے کو مکمل طور پر غیر متعلقہ قرار دے کر جمہوری نظام کی بساط لپیٹنے کی منصوبہ بند کوشش ہے۔ انتخابی عمل میں سوچی سمجھی بے ضابطگیوں کا مقصد مرکزی سیاست میں انتہا پسندی کی مداخلت اور لوگوں کی گردنوں پر مذہبی حکومت کا طوق چڑھانے کے ضیاءالحق کے ایجنڈے کی تکمیل ہے۔ایگزیکٹو کونسل کا کہنا تھا کہ ایچ آر سی پی کا سیاسی جماعتوں اور سول سوسائٹی سے مطالبہ ہے کہ وہ پاکستان کو جمہوریت کی پٹڑی سے اتارنے کی حالیہ کوششوں کی بھرپور مذمت کریں اور غیر نمائندہ طرز حکومت کے قیام کے لیے مختلف حیلہ سازیوں سے انتخابات میں تاخیر کرنے کی تمام کارروائیوں کا پ±رعزم مقابلہ کریں ۔ انتخابات کا التواءغیر معمولی طور پر خلافِ عقل اور خطرناک ہے جس کا پاکستان بالکل بھی متحمل نہیں ہوسکتا۔ ایچ آر سی پی کا الیکشن کمیشن سے بھی مطالبہ ہے کہ وہ انتخابی عمل میں بے ہنگم محاذ آرائی کے انسداد کے لیے مداخلت کرے۔

مزید : انسانی حقوق