جنوبی چھاﺅنی کا مقدمہ قتل ،ملزم ذیشان ریاض کی درخواست ضمانت منظور

جنوبی چھاﺅنی کا مقدمہ قتل ،ملزم ذیشان ریاض کی درخواست ضمانت منظور

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائیکورٹ نے لاہور کے جنوبی چھاﺅنی کے علاقہ میں قتل کے مقدمہ میں ملوث ملزم ذیشان ریاض کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے دو دو لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکوں پر رہا کرنے کا حکم دے دیا ہے ۔ گذشتہ روز دوران کیس کی سماعت میں درخواست گذار کے وکیل محمد عارف گوندل ایڈووکیٹ نے عدالت کو بتایا کہ مقتول اور درخواست گذار وغیرہ آپس میں دوست تھے مقتول نے پسٹل خریدنے کی خواہش ظاہر کی جس پر شاہین نے مقتول سے کہاکہ اس کے پاس پستول ہے چیک کر لے چیک کرنے پر اچانک گولی چل گئی اور مقتول کی گردن پر لگی جس پر ذیشان وغیرہ اسے فوجی فاﺅنڈیشن ہسپتال لے گئے ہسپتال والوں نے کہا کہ اسے جنرل ہسپتال لے جائیں جس پر وہاں لے جایا گیا تو وہاں اس کی موت واقع ہو گئی انہوں نے عدالت کو یہ بھی بتایاکہ اس امر پر مقتول کے وارثان نے ملزمان پرقتل کامقدمہ درج کروا دیاانہوں نے عدالت میں مزید دلائل میں کہا کہ چونکہ یہ وقوعہ قتل کا نہیں بنتا یہ قتل خطا ہے ملزم نے دانستہ نیت سے مقتول کو قتل نہیں کیا انہوں نے عدالت کو یہ بھی بتایا کہ ملزم کا 319کے تحت چالان کیاگیااس لیے قتل خطا میں دیت ہے اور پانچ سال قید کی سزا ہے جو کہ قابل ضمانت ہے لہذا عدالت سے استدعا ے کہ وہ اس امر کا نوٹس لے فاضل عدالت نے درخواست منظور کرتے ہوئے ملزم ذیشان کی حد تک ضمانت منظور کر لی اور ملزم کو دو لاکھ روپے کے مچلکوں پر رہا کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

مزید : علاقائی