گندم خریداری :باردانہ کی میرٹ پر فراہمی یقینی بنائیں

گندم خریداری :باردانہ کی میرٹ پر فراہمی یقینی بنائیں

پنجاب کابینہ نے اپنے اجلاس میں گندم کی خریداری پالیسی کی منظوری دیتے ہوئے 1300 روپے فی من کے حساب سے 40لاکھ میٹرک ٹن گندم خریدنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اِس سلسلے میں بار دانہ کی تقسیم15اپریل سے شروع ہو گی۔ وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے واضح کیا ہے کہ کسی کو کسانوں کا حق مارنے نہیں دیا جائے گا۔ حکومت کی طرف سے کسانوں کے لئے سہولتوں کی فراہمی اطمینان بخش ہے،لیکن ہر سال گندم کی خریداری کے موقع پر بار دانہ کا حصول بہت بڑا مسئلہ بن جاتا ہے۔کسانوں کی یہ شکایت درست ہے کہ باردانہ کی تقسیم میں کسانوں اور کاشتکاروں کی بجائے بااثر افراد کو ترجیح دی جاتی ہے، اس میں خریداری کے متعلق عملہ بھی ملوث ہوتا ہے۔ کسان دھکے کھاتے رہتے ہیں۔ حتیٰ کہ بعض پولیس حکام سرکاری گاڑیوں میں بھر بھر کر باردانہ جمع کرتے ہیں۔ چنانچہ کسانوں کو تاخیر سے بار دانہ ان کی مطلوبہ تعداد سے بہت کم حاصل ہوتا ہے یا پھر وہ بلیک میں باردانہ حاصل کر کے اپنی گندم کو فروخت کے لئے خریداری مراکز تک پہنچاتے ہیں۔ وزیراعلیٰ پنجاب کو اِس مسئلے پر خصوصی توجہ دے کر کسانوں کی دیرینہ شکایات کا خاتمہ کرنا چاہئے۔

مزید : اداریہ