ورلڈ بینک کے تعاون سے آئی ٹی سسٹم تبدیل کررہے ہیں:چیئرمین ایف بی آر

ورلڈ بینک کے تعاون سے آئی ٹی سسٹم تبدیل کررہے ہیں:چیئرمین ایف بی آر

لاہور (کامرس رپورٹر) ورلڈ بنک کے تعاون سے پورے آئی ٹی سسٹم کو تبدیل کر رہے ہیں پرال ہمارا سروس پرووائڈرہوگا آئرس سسٹم کی وجہ سے پچھلے سال کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا جسکی وجہ سے ٹیکس گوشووارے بھی کم جمع ہوئے سسٹم کے باربار سست ہونے کی وجہ سے کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑامگراب کافی حد تک قابوپالیاگیا ہے آئی ٹی سسٹم کا چیف ایگزیکٹوپروفیشنل اور میرٹ پر تعینات کیاہے جسکی پرفارمنس دن بدن بہتر ہورہی ہیں ایف بی آر بجٹ 2017-18 کے حوالے سے اور ٹیکس بیس ا ور ٹیکس نیٹ کو بڑھانے کے لیے بہت بڑاپروگرام لارہاہے ڈیجیٹل ڈائری کے ساتھ ساتھ نئے میھترڈمتعارف کروائے جارہے ہیں یہ باتیں ایف بی آر کے چیرمین ڈاکٹر محمد ارشاد نے ٹیکس ماہرین اور میڈیاگفتگو کے دوران کیں اس موقع پر پاکستان ٹیکس فورم کے چیرمین ذوالقفارخان پاکستان ٹیکس ایڈوائزرایسوسی ایشن کے صدر میاں عبدالغفارگوجرانوالہ ٹیکس بار کے صدر عابد حفیظ عابد راولپنڈی اسلام آبادٹیکس بار کے سنئیر نائب صدرسیدتنصیربخاری ،سا بق صدور حبیب ا لرحمن زبیر ی، محمد حسن علی قادری، ٹیکس ماہرین زوہیب ا لرحمن ز بیری نے میڈیاسے گفتگوکرتے ہوئے کہاایف بی آرکاآئرس سے پرال سسٹم کی طرف آنامثبت اور ترقی کی طر ف قدم ہے کیونکہ پرال سسٹم سے ٹیکس پئیرٹیکس ماہرین آشناہو چکے تھے،

آئرس سسٹم کو متعارف کروانے کے لیے ایف بی آر نے جہاں حکومتی خزانے کے اربوں روپے ضائع کیئے وہیں ٹیکس پئیراور ٹیکس کنسلٹنٹ کوبھی کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑامگر ایف بی آر کا دوبار پرال سسٹم کی طرف آنا خوش آئندہے اور ترقی کی طرف مثبت قدم ہے چیرمین ایف بی آر اگر پرال سسٹم کو دوبار بحال کرنے میں کامیاب ہوتے ہیں اور واقعی ایف بی آر بڑا پروگرام لارہا ہے تو پاکستان بھی ترقی یافتہ ممالک کی صف میں آسکتا ہے کیونکہ ٹیکس نیٹ اور ٹیکس بیس کو بڑھانے کے لیے ٹیکس گزاروں کوبنیادی سہولیات فراہم کرنا حکومت اور ایف بی آر کی اولین ترجیحات ہونی چاہیں۔

مزید : کامرس