پنجاب حکومت سوشل سیکٹر کی ترقی کیلئے خصوصی اقدامات کر رہی ہے،ترجمان پی اینڈ ڈی

پنجاب حکومت سوشل سیکٹر کی ترقی کیلئے خصوصی اقدامات کر رہی ہے،ترجمان پی اینڈ ...

لاہور (کامرس رپورٹر) حکومت صوبہ پنجاب کے ترقیاتی بجٹ کی روشنی میں سوشل سیکٹر کی ترقی کیلئے خصوصی اقدامات کر رہی ہے اور اس ضمن میں سوشل سیکٹر کو سالانہ ترقیاتی پروگرام 2016-17 میں خصوصی ترجیح دی گئی ہے۔ شعبہ تعلیم کیلئے 73 بلین روپے (13%) سالانہ ترقیاتی بجٹ میں سے دئیے گئے۔ان خیالات کا اظہار محکمہ پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ پنجاب کے ترجمان نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ترجمان پی اینڈ ڈی نے بتایا کہ حکومت کی جانب سے وزیر اعلیٰ پنجاب کے ’’پڑھو پنجاب، بڑھو پنجاب‘‘ پروگرام کے تحت تعلیمی انقلاب کیلئے خصوصی اقدامات اٹھائے گئے ہیں۔ تعلیم کے شعبہ میں سکول ایجوکیشن کیلئے 47.760 بلین روپے رکھے گئے جو کہ گزشتہ سال کی نسبت 44 فیصد زائد ہے۔طلبہ و طالبات کو معیاری تعلیم کی فراہمی کیلئے سازگار ماحول فراہم کیا جا رہا ہے اور اس ضمن میں سہولیات کے فقدان کی کمی کو دور کرنے کیلئے 2010 سے 2016 تک 40 ارب روپے مختص کئے گئے تاکہ صوبہ بھر کے سکولوں میں صاف پانی کی فراہمی، باؤنڈری والز، بیت الخلا سمیت بجلی کی فراہمی کو یقینی بنایا جا رہا ہے۔ پنجاب حکومت کے خطرناک عمارتوں کی تعمیر و بحالی پروگرام کیلئے تاحال16 ارب روپے دئیے گئے ہیں۔ علاوہ ازیں رواں سال میں سکولوں میں 6519 اضافی کلاس رومز کی تعمیر کیلئے کام کا آغاز کر دیا گیاہے اور اس ضمن میں ڈویلپمنٹ بجٹ کی مد میں 15ارب روپے رکھے گئے ہیں۔ پنجاب حکومت کے پہلے 2012-13 اجالا پروگرام ’’سولر لیمپس کی فراہمی‘‘ کے تحت مجموعی طور پر 2 لاکھ 98 ہزار طلبہ مستفید ہوئے جبکہ نئے وزیر اعلیٰ اجالا پروگرام کے تحت 20 ہزار سکولوں کو شمسی توانائی کے ذریعے سے بجلی فراہم کرنے کیلئے باقاعدہ طور پر جامع پروگرام مرتب کیا جا رہا ہے تاکہ بچوں کو سازگار تعلیمی ماحول مہیا کیا جا سکے۔

مزید : صفحہ آخر