ضلع کونسل ملتان کے دوسرے اجلاس کی جھلکیاں(سعید مکول)

ضلع کونسل ملتان کے دوسرے اجلاس کی جھلکیاں(سعید مکول)

* ضلع کونسل کا دوسرا اجلاس ڈیڑھ گھنٹہ تاخیر سے شروع ہوا۔اپوزیشن کا اجلاس تاخیر سے شروع ہونے پر شدید احتجاج۔ (بقیہ نمبر35صفحہ12پر )

* کنونیئر واجد علی شاہ نے کہا کہ کورم پورا نہ تھا اس لئے اجلاس شروع نہ ہوسکا۔

* ضلع کونسل کیاراکین نے 1ہزار روپے اعزازیہ کو شرمناک قرار دے دیا۔

* چیئرمینوں کو ایک ہزار روپے اعزازیہ دینے کے مسئلہ پر حکومتی و اپوزیشن ارکان اکھٹے ہوگئے۔

*غلام دستگیر اٹھنگل نے سید مجاہد علی شاہ کے خطاب کے بعد کہا کہ ہمیں ڈکٹیٹ نہ کیا جائے جس پر مجاہد علی شاہ نے کہا ہے کہ میں قانون بتا رہا ہوں۔

* چوہدری خلیل نے نوٹیفکیشن اور ایکٹ میں فرق پو چھ لیا۔ کنونئیر مجاہد علی شاہ، واجد علی شاہ خاموش ہو گئے ، سی او اصغر مجید بلوچ نے جواب دیکر ممبران کو خاموش کروایا۔

* فرخ نسیم نے چیئرمینوں کو شناختی کارڈ بنا کر دینے کا مطالبہ کردیا۔

چیئرمین عبدالمجید ماجد نے افسران کو اجلاس میں بلانے کا مطالبہ کردیا۔

* اجلاس کے وران انتظامیہ نے کھانا تقسیم کرنا شروع کردیا جس سے اراکین کی دلچسپی ختم ہو گئی۔

* اراکین نے کھانا ہال میں دینے کے بجائے ہال سے باہر ٹیبل لگا کر دینے کا مطالبہ کردیا۔

* چیئرمین منرل واٹر مانگتے رہے جس پر کنونئیر نے کہا کہ ایک ہزار لیتے نہیں منرل واٹر مانگ رہے ہیں۔

* اصغر علی شاہ نے کہا کہ اختیارات نہیں ہیں تو اجلاس میں کیو ں بلاتے ہیں کنونئیر اختیارات کا استعمال کرنا سیکھیں۔

* چیئرمین جاوید راں نے فرخ نسیم کے سوال کا جواب شعر پڑ ھ کر دیا۔کنونئیر نے رحمان علی کے شعر پڑھنے پر کہا ہے کہ آپ کی خوبی کا اب پتہ چلا ہے ۔

*مخصوص نشستوں پر منتخب ہونے والے اراکین کی حاضری کم رہی ،15خواتین میں سے 5خواتین نے اجلاس میں شرکت کی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر