راجن پور ‘ زائد المیعاد انجکشن لگانے سے مریض کی ہلاکت‘ ورثاء کا احتجاج

راجن پور ‘ زائد المیعاد انجکشن لگانے سے مریض کی ہلاکت‘ ورثاء کا احتجاج

راجن پور(ڈسٹرکٹ رپورٹر) عاقل پور روڈ پر شان کالو نی کے چھبیس سالہ محنت کش محمداقبال کے سینے میں اچا نک تکلیف ہوئی جس کے باعث اُسے ڈسٹر کٹ ہیڈ کوآرٹر ہسپتال کی ایمرجنسی میں داخل کرایا گیا جہاں مبینہ طور پر انجکشن لگتے ہی نوجوان دم توڑ گیا جس پر نوجوان کے والد مستری(بقیہ نمبر17صفحہ12پر )

کوڑا اور دیگرورثاء نے ایمرجنسی میں موجود ڈاکٹرز اور پیرامیڈیکل اسٹاف کے خلاف احتجاج کیا ورثاء کاالزام تھا کہ متوفی کوزائدالمیعادانجکشن لگایا گیا جس کے باعث اُس کی موت واقع ہوگئی اس موقع پر ڈپٹی کمشنر اشفاق احمد چوہدری ،اسسٹنٹ کمشنر شاہد محبوب ،ڈی ایس پی ہیڈ کوآرٹر سید رمیض بخاری ،ایس ایچ اوسٹی بلال خان پٹھان ودیگر انتظا می آفیسران ہسپتال پہنچ گئے ڈپٹی کمشنر نے متوفی کے والد کوتسلی دی کہ میں نے تحقیقات کا حکم دے دیا ہے دوروز کے اندر انکوائری کمیٹی جس کی سر براہی اسسٹنٹ کمشنر راجن پور شاہد محبوب کریں گے جبکہ ڈاکٹر ریاض مستوئی ،ڈاکٹر منیر صدیقی اور فارماسسٹ خالدہ اُن کی معاونت کریں گے واضح رہے کہ متوفی محمداقبال والد کوڑا خان کا اکلوتا بیٹا تھااور تین بچوں کا باپ بھی بتایا جاتا ہے ۔

انجکشن

مزید : ملتان صفحہ آخر