ضلع کونسل ملتان کا دوسرا اجلاس، ساڑھے 13کروڑ مالیت کی ترقیاتی سکیمیں منظور

ضلع کونسل ملتان کا دوسرا اجلاس، ساڑھے 13کروڑ مالیت کی ترقیاتی سکیمیں منظور

ملتان (سپیشل رپورٹر،خبر نگار) ضلع کونسل ملتان کا دوسرا اجلا س ، چیئر مینوں نے پنجاب حکومت کی جانب سے چیئرمین کا اعزازیہ ایک ہزار مقر ر کرنے کوشرمناک قرار دیتے ہوئے وصول نہ کرنے کا اعلان کردیا ہے ، اجلاس میں تشہیری فیس کی وصولی کے اختیارات ضلع کونسل کو دینے اور ساڑھے 13کروڑ روپے مالیت کی ترقیاتی سکیموں کی بھی منظوری دے دی گئی ہے۔ اپوزیشن کے شدید احتجاج کے باعث ضلع کونسل کا اجلاس شور شرابے کی نذرہوکر رہ گیا ۔ تفصیل کے مطابق ضلع کونسل ملتان کا اجلاس گذشتہ روز منعقد ہوا اپوزیشن ڈیڑھ گھنٹہ تک اجلاس شروع نہ کرنے پر شدید برہم ہو گئی اور وائس چیئرمین ملک ذوالفقار ڈوگر سے اجلاس شروع کرنے کی درخواست کی گئی۔ جس پر کنونئیر واجد علی شاہ موقع پر پہنچ گئے اور اجلاس کی کاروائی شروع کردی گئی ۔ قائد حز ب اختلاف غلام دستگیر اٹھنگل نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ضلع کونسل کی عمارت میں اپوزیشن کو علیحدہ کمرہ نہیں دیا گیا ہے جبکہ مسلم لیگ ن کو کمرہ بطور دفتر الاٹ کردیا ہے جس پر ہم شدید احتجاج کرتے ہوئے اور مطالبہ کرتے ہیں کہ دفتر فوری خالی کروایا جائے ورنہ چیئرمین کے دفتر کا گھیراو کیا جائے گا اگر پھر بھی دفتر خالی نہ کروایا گیا تواپوزیشن خودجا کر قبضہ کر لے گی۔ اجلاس میں اراکین کو بتایا گیا ہے کہ حکومت کی طرف سے 40ہزار چیئرمین، 30ہزار وائس چیئرمین اور 1ہزار روپے اراکین کو دیئے جائیں گے جس پر حکومتی و اپوزیشن ممبران نے احتجاج شروع کردیا اور اعزازیہ کو شرمناک قرار دیا۔ چیئرمین ناصر خان بادوزئی نے کہاہے کہ ہمیں ایک ہزار روپے دینے کے بجائے ایک ہزار روپے لے لیا جائے تاکہ حکومتی فنڈز کوپورا کیا جاسکے۔ ارشد میٹ نے کہا کہ تمام اراکین کے پیسوں کا اکھٹا کرکے کسی بھی ممبر کو عمرہ پر بھیجا جائے۔ ذہین کنول نے کہا ہے کہ چیئرمین کا اعزازیہ ایک ہزار کے بجائے 10ہزار کیا جائے۔ حاجی محمد کھوسہ نے کہاہے کہ 15ہزار روپے اعزازیہ مقرر کیا جائے اور یونین کونسل کے فنڈز سے وصول کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں۔ مجاہد علی شاہ نے کہا کہ یہ حکومت کا منظور شدہ قانون ہے اور اگر ممبران نے ایجنڈا منظور نہ کیا اور کاروائی کا پہیہ جام کرنے کی کوشش کی تو ممبران کوفنڈز نہیں ملیں گے ابھی بھی تمام اختیارات بیوروکریسی کے پاس ہیں ، ڈپٹی کمشنر ایوان سے پاس کردہ ایجنڈا کو مسترد کرنے کے اختیارات رکھتے ہیں۔ نظام کو چلانے کیلئے تجاویز دیں پنجاب حکومت کو بھیجی جائے گی۔ فرخ نسیم نے کہا ہے کہ سی او یونٹ کا کردار واضح نہیں اختیارات چیئرمین کو دیئے جائیں یا کمیٹی بنائی جائے۔ ملک ذوالفقار ڈوگر نے کہاہے کہ پنجاب حکومت کو لکھ کر بھیج دیا ہے کہ قادر پور راں اور مخدوم رشید کو میونسپل کمیٹی بنایا جائے۔ تمام چیئرمین اپنے علاقے سے 5تا 9سال کے بچوں کو سکول میں داخل کرائیں۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ملک عمر فاروق کھوکھر نے کہا ہے کہ ڈپٹی کمشنر سمیت بیوروکریسی ہمارے ٹیکسز سے تنخواہیں وصول کر رہی ہے چیئرمین کو عوام نے منتخب کیا ہے ، ڈپٹی کمشنر سے ڈکٹیشن قبول نہیں کریں گے اور چیئرمینوں کی عزت نفس مجروح نہیں ہونے دیں گے۔ عفت زہرہ نے کہا ہے کہ چیئرمین و ممبران کی تربیت کا انتظام کیا جائے۔ عبدالرحمن سنگھیڑا نے کہا ہے کہ ضلع کونسل کے ملازمین کی بدتمیزی کا نوٹس لیا جائے۔ محمد رحمان علی نے کہا کہ حکومت جوادارے مکمل کر چکی ہے انہیں استعمال کیا جائے سٹرکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔ چوری اور ڈکیتی ختم کرنے کیلئے پولیس کے ساتھ میٹنگ کی جائے بیٹ میں چوری ڈکیتی کے سدباب کیلئے ردالفساد کی طرز پر آپریشن شروع کیا جائے جس کا فائدہ شہروں میں بھی ہوگا۔ کامران سن نے کہا کہ میری یونین کونسل میں 4سینٹری ورکرز ہیں دو شہزاد مقبول بھٹہ کے ڈیرے پر کام کر رہے ہیں جبکہ دو چھٹیوں پر ہیں سدباب کیا جائے۔ چیئرمین کو شناختی کارڈ کے فارم تصدیق کرنے کے اختیارات دیئے جائیں۔ کنونئیر واجد علی شاہ نے کہا ہے کہ غیر متعلقہ افراد کو ایوان میں داخلے سے روکنے کیلئے کارڈز جاری کئے جائیں گے۔ جاوید راں نے کہا ہے کہ آڈٹ آفیسران عارضی چارج پر موجود ہیں مستقل بنیادوں پر بھرتی کیلئے سیکرٹری فنانس سے بات کی جائے۔ ایاز بودلہ نے کہا ہے کہ میری یونین کونسل میں پولیس اسٹیشن قائم ہو چکا ہے خالی کروایا جائے یونین کونسل کی سطح پر سپورٹس کمیٹی بنائی جائے اور فنڈز فراہم کئے جائیں۔ سیاستدانوں کے جلسے جلسوں پر پابندی نہیں لیکن بیساکھی سمیت دیگر میلوں پر پابندی عائد ہے۔ پابندی ختم کی جائے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری خلیل اعوان نے کہا ہے کہ نوٹیفکیشن اور ایکٹ میں فرق ہوتا ہے ہم سے اعزازیہ کا حکومتی نوٹیفکیشن منظور کروا کر گنا ہ نہ کروایا جائے۔ اجلاس میں چیئرمین ، وائس چیئرمین اور اراکین کے اعزازیہ، اخراجات سی او یونٹس مخدوم رشید و قادر پور راں، ترمیمی بجٹ 2016۔17ڈسٹرکٹ کونسل، ایڈورٹائزمنٹ ہورڈنگز بورڈ بائی لاز، سالانہ ترقیاتی سکیم کی منظوری دے دی گئی ہے۔ جبکہ ندیم عباس کی جانب سے یونین کونسل 173میں نائب قاصد کی تعیناتی اور ڈینگی سپرے کرانے کی پیش کی جانیوالی قرار داد منظور کر لی گئی ہے۔ اجلاس سے عبدالمجید ماجد، عارف کمال، حامد شاہ گیلانی، محسن اقبال ، ملک محمد شفیع ، ملک نذیر ہمڑ، ذہین کنول نے بھی خطاب کیا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر