متحدہ عرب امارات میں پھنسے پاکستانی خاندان کو رہائش سے محروم ہونے کا خدشہ،کرایہ ادائیگی کیلئے 17ہزار درہم کی اپیل کر دی

متحدہ عرب امارات میں پھنسے پاکستانی خاندان کو رہائش سے محروم ہونے کا ...
متحدہ عرب امارات میں پھنسے پاکستانی خاندان کو رہائش سے محروم ہونے کا خدشہ،کرایہ ادائیگی کیلئے 17ہزار درہم کی اپیل کر دی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ابوظہبی (ڈیلی پاکستان آن لائن )متحدہ عرب امارت میں پاکستانی خاندان کو اپارٹمنٹ کا کرایہ ادا نہ کرنے پر رہائش سے محروم ہونے کا خدشہ پیدا ہو گیا جنہوں نے کرایے کی ادائیگی کیلئے 17ہزار درہم کی اپیل کر دی ۔

”گلف نیوز “ کے مطابق شہر اجمان میں بیٹی کے ہمراہ رہائش پزیر پاکستانی میاں بیوی کو اپارٹمنٹ کے کرایے کی مدمیں 17ہزار درہم کی اشد ضرورت ہے مگر نوکری ختم ہونے کے باعث وہ کوڑی کوڑی کے محتاج ہو چکے ہیں اور اب خدشہ ہے کہ اگر انہوں نے کرایہ ادا نہ کیا تو رہائش سے بھی محروم ہو سکتے ہیں ۔

’’آپ یہ کام نہیں کر سکتی‘‘، عدالت نے نرگس کو واضح ہدایت کردی

52سالہ شہزاد آصف مسعود کا کہنا ہے کہ چا ر سال قبل مفرور ہونے کی شکایت پر انکی نوکری چلی گئی اور حالات بد سے بد ہوتے چلے گئے اور اب صورت حال یہ ہے کہ ہم اپنے اپارٹمنٹ کا ماہانہ 24سو درہم کرایہ بھی ادا نہیں کر پا رہے ۔

پاکستانی شہری کا کہنا تھا کہ انکے اپارٹمنٹ کا مجموعی واجب الادا کرایہ 71ہزار درہم ہے مگر مالک مکان نے فوری طور پر 17ہزار درہم ادا کرنے کی شرط رکھی ہے جبکہ باقی مانندہ رقم قسطوں کی صورت میں ادا کرنا ہو گی ۔

”چلا چلا کر نہیں بتا سکتی کہ تیمور سے۔۔۔‘‘، کرینہ کپور کا ناقدین کو جواب

متحدہ عرب امارات میں 29سال سے مقیم شہزاد آصف مسعود کا کہنا ہے کہ اجمان کی کمپنی میں سول انجینئرنگ کی ملازمت ختم ہونے کے بعداپنی بیو ی کے ہمراہ چھوٹی موٹی ملازمتیں کرنے پر مجبور ہوں ۔

”تنگ دستی اور بے روز گاری کی وجہ سے ہم کھانے پینے کے اخراجات کم کر چکے ہیں اور خیرات سے بھی کچھ نہیں ہو گا کیونکہ ہمارے ویزے رینیو نہیں ہوئے “۔

مقبوضہ کشمیر میں پاکستان کا قومی ترانہ پڑھنے والے کشمیری کھلاڑیوں کو ۔۔۔تشویشناک خبر آگئی

ان کا کہنا تھا کہ کچھ لوگوں نے مدد کی مگر کرایے کی رقم اس قدر زیادہ ہے کہ باآسانی ادا نہیں ہو سکتی جس کے بعد اب ہمیں کسی بھی وقت رہائش سے بھی محروم کیا جا سکتا ہے۔”میرے تین بچے پاکستان واپس جا چکے ہیں اور ایک بیٹی ہمارے ساتھ اپارٹمنٹ میں مقیم ہے “۔

مزید : عرب دنیا