نوجوان سعودی لڑکیاں سڑک پر ایک ایسا کام کرتے ہوئے اپنی ویڈیوز بنا بنا کر انٹرنیٹ پر ڈالنے لگیں کہ ملک میں ہنگامہ برپاہوگیا، سعودی عرب کی تاریخ کا انوکھا ترین کام ہوگیا

نوجوان سعودی لڑکیاں سڑک پر ایک ایسا کام کرتے ہوئے اپنی ویڈیوز بنا بنا کر ...
نوجوان سعودی لڑکیاں سڑک پر ایک ایسا کام کرتے ہوئے اپنی ویڈیوز بنا بنا کر انٹرنیٹ پر ڈالنے لگیں کہ ملک میں ہنگامہ برپاہوگیا، سعودی عرب کی تاریخ کا انوکھا ترین کام ہوگیا

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی خواتین ڈرائیونگ کا حق مانگنے کے لئے گاہے بگاہے آواز اٹھاتی رہتی ہیں لیکن پہلی بار انہوں نے سڑکوں پر خاموش واک کے زریعے اپنا احتجاج کچھ ایسے انداز میں ریکارڈ کروایا ہے کہ انٹرنیٹ پر ہنگامہ کھڑا کر دیا ہے۔ دی انڈیپینڈنٹ کی رپورٹ کے مطابق سعودی خواتین خاموشی سے سڑکوں پر چلتی ہیں اور اس دوران اپنی ویڈیو بنا کر سوشل میڈیا پر پوسٹ کر رہی ہیں۔ اس منفرد احتجاج کی ویڈیوز نے سوشل میڈیا پر خاصی مقبولیت حاصل کرلی ہے۔

عرب ملک کے سفیر نے اپنی امیر کبیر بیوی پر شرمنا ک الزام لگا کر جیل بھجوا دیا

واضح رہے کہ سعودی عرب دنیا کا واحد ملک ہے جہاں خواتین کو ڈرائیونگ کی اجازت نہیں۔ یہ پابندی 1957ءمیں عائد کی گئی اور اگرچہ اس کے خلاف کئی بار آواز اٹھائی گئی لیکن تاحال یہ پابندی برقرار ہے۔ اس پابندی کے خلاف خواتین کے خاموش احتجاج کی ویڈیوز سوشل میڈیا پر ہیش ٹیگ #resistancebywalking کے زریعے خوب پھیل رہی ہے۔

مزید : عرب دنیا