مودی 21ویں صدی کا ہٹلر ، انتہا پسندانہ اور دہشت گردانہ ذہنیت کا حامل شخص ہے،جس کے ہاتھ کشمیریوں کے خون سے رنگے ہوئے ہیں:فاروق حیدر

مودی 21ویں صدی کا ہٹلر ، انتہا پسندانہ اور دہشت گردانہ ذہنیت کا حامل شخص ...
مودی 21ویں صدی کا ہٹلر ، انتہا پسندانہ اور دہشت گردانہ ذہنیت کا حامل شخص ہے،جس کے ہاتھ کشمیریوں کے خون سے رنگے ہوئے ہیں:فاروق حیدر

  

مظفر آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعظم آزاد کشمیر نے کہا ہے کہ مودی 21 ویں صدی کا ہٹلر ہے، بھارتی وزیر اعظم انتہا پسندانہ اور دہشت گردانہ ذہنیت کا حامل شخص جس کے ہاتھ کشمیریوں کے خون سے رنگے ہوئے ہیں۔بھارت کشمیریوں کی جدوجہد سے خوفزدہ ہے اور 14سو کلومیٹر لائن آف کنٹرول کو بھارت نے آہنی دیوار میں بدل دیا ہے لائن آف کنٹرول کو مستقل سرحد میں نہیں بدلا جا سکتا اور نہ بھارت کے ایسے ہتھکنڈے کامیاب ہوں گے ہندوستان نے مقبوضہ کشمیر میں جتنی فوج تعینات کر رکھی ہے آبادی کے تناسب سے یہ جنگ عظیم دوم کے بعد سب سے بڑی فوج ہے۔

ایدھی قبرستان میں85ہزار لاوارث لاشیں دفن ہیں: پولیس رپورٹ میں انکشاف

برطانوی اراکین پارلیمنٹ کے وفد نے وزیر اعظم ہاﺅس میں راجہ فاروق حید ر سے ملاقات کی۔ وفد میں برطانوی اراکین پارلیمنٹ عبدالرحمن چشتی ، نی گل ہیڈلسٹن ، مارک پاؤ سے، ہنری سمتھ ، میتھیو اوفرڈ اور رولسٹن سمتھ شامل تھے۔ اس موقع پر وزیر اعظم آزاد کشمیر نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مودی کا ماضی انتہائی داغدار ہے ہندوستان میں موجود مسلمانوں سمیت دیگر اقلیتوں کے خون سے مودی کے ہاتھ رنگے ہوئے ہیں، مقبوضہ کشمیر میں آزادی کی پرامن جدوجہد میں مصروف عوام کو قابض بھارتی فوج ریاستی دہشت گردی کانشانہ بنا رہی ہے مقبوضہ کشمیر میں آزادی کی جدوجہد کو دبانے کے لیئے ہندوستان نے کالے قانون نافذ کر رکھے ہیں بھارت مقبوضہ کشمیر میں جنگی جرائم کا ارتکاب کر رہا ہے جنوبی ایشیاءمیں امن کے قیام ،غربت کے خاتمے ،بھوک و افلاس سے نجات کے لیئے مسئلہ کشمیر کا حل ناگزیر ہے بھارت کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے جنوبی ایشیاءکا امن داؤپر لگا ہوا ہے مسئلہ کشمیر کی وجہ سے دو ایٹمی قوتوں کے درمیان خطرناک جنگ کا خطرہ ہے عالمی برادری ،اقوام متحدہ ،انسانی حقوق کے عالمی دارے اور مہذب دنیا اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کے حل میں اپناکردار ادا کریں ۔

میں اس کی جان بچانے کے لئے اپنے جسم کا ایک حصہ عطیہ کر دوں گا ،بھارتی فلم انڈسٹری کے معروف ہیرو عرفان خان کے اعلان نے سب کو حیران کر دیا

پارلیمانی وفد سے گفتگو کے دوران وزیراعظم آزادکشمیر کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر کے عوام اپنے پیدائشی حق ،حق خودارادیت کے لیئے پرامن جدوجہد میں مصروف ہیں جولائی کے بعد نہتے کشمیریوں نے بھارتی گولیوں کا اپنے سینے پیش کر کے مقابلہ کیا بھارتی فوج کی گولی کے مقابلے میں کشمیری پتھر استعمال کر رہے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کی سفارتی ،سیاسی اور اخلاقی حمایت کر رہا ہے اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق یہ پاکستان کا فرض ہے بھارت کی طرف سے پاکستان پر الزامات بے بنیاد ہیں ۔مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے جنگی جرائم بین الاقوامی برادری اور مہذب دنیا کے لیئے لمحہ فکریہ ہیں عالمی برادری کو بھارت سے تجارتی و اقتصادی تعلقات اور معاہدے کرنے سے پہلے مقبوضہ کشمیر کی صورت حال کو مد نظر رکھ کر فیصلے کرنا ہوں گے مہذب دنیابھارت پر تجارتی اور اقتصادی دباؤ ڈال کر مسئلہ کشمیر کے حل کی راہ ہموار کر سکتی ہے۔

جب تک مسائل حل نہیں ہوتے ، ایجنڈا تبدیل نہیں ہوگا،عوام کو درپیش مشکلات دور کرنے کیلئے زندگی صرف کریں گے:مصطفی کمال

وزیراعظم سیکرٹریٹ میں برطانوی اراکین پارلیمنٹ کو مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کے وحشیانہ مظالم پر مشتمل دستاویزی دکھائی گئی۔۔ اس موقع پر وزیرحکومت ڈاکٹر نجیب نقی ،مشتاق مہناس ،پرنسپل سیکرٹری احسان خالد کیانی ،اے سی ایس جنرل مرحت علی میر اور دیگر حکام بھی موجود تھے۔

مزید : مظفرآباد