پاکستان اور چین کے کرونا وائرس میں 99.7فیصد یکسانیت ہے: ڈاکٹر کامران عظیم

پاکستان اور چین کے کرونا وائرس میں 99.7فیصد یکسانیت ہے: ڈاکٹر کامران عظیم

  

کراچی(این این آئی) محمد علی جناح یونیورسٹی کراچی کی فیکلٹی آف لائف سائنسز کے ڈین اور مولیکیولر بائیو لوجی کے پروفیسر ڈاکٹر کامران عظیم نے کہا ہے کہ سائنسدانوں کیلئے ضروی ہوگیا ہے کہ وہ کرونا وائرس کے مختلف پہلو عوام کے سامنے اجاگر کرتے وقت احتیاط سے کام لیں،گزشتہ چند روز کے دوران مقامی اخبارات میں چین اور پاکستان کے مریضوں کے کرونا وائرس کے جینیومز کی مختلف حا لتوں سے متعلق شائع ہونے والی خبروں میں تیکنیکی طور پر خامی تھی۔ ہفتہ کو یہاں جاری اپنے ایک بیان میں پروفیسر کامران عظیم نے کہاکہ عالمی سطح پر سینکڑوں کرونا وائرس جینیومز کو ترتیب دیا گیا ہے اورتمام ماہرین نے چین کے شہر ووہان کے اصل کرونا وائرس سے 99.5 سے 99.9 فیصد تک شناخت ظاہر کی ہے۔ اب تک پاکستان سے دو کرونا وائرس جینیوم کی تسلسل ڈیٹا سیٹس نیشنل یونیورسٹی آف سائینس اینڈ ٹیکنالوجی، اسلام آباد (NUTS) اور اے آر آئی ڈی،راولپنڈی) کو موصول ہوئی ہے جن میں تصدیق کی گئی ہے کہ چین اور پاکستان کے کرونا وائرس کے مریضوں کے جینیوم میں یکسانیت موجود ہے۔ ہمارے بائیو انفارمیٹکس تجزیہ سے بھی یہ بات سامنے آئی ہے کہ ووہان کے کرونا وائیرس جینیوم کے پاکستان کے کرونا وائرس جینیوم 99.7 فیصد یکساں ہے،اس لئے مزید تجربات کئے بغیر یہ بتانا ناممکن ہے کہ پاکستان میں کرونا چین سے مختلف ہے۔

ڈاکٹرکامران عظیم

مزید :

علاقائی -