داعش خراسان کے کمانڈراسلم فاروقی 19ساتھیوں سمیت افغانستان میں گرفتار

داعش خراسان کے کمانڈراسلم فاروقی 19ساتھیوں سمیت افغانستان میں گرفتار

  

کوہاٹ(این این آئی) قبائلی ضلع اورکزئی سے تعلق رکھنے والے داعش خراسان کے کمانڈر عبداللہ اورکزئی المعروف اسلم فاروقی کو افغان خفیہ ایجنسی این ڈی ایس نے 19 ساتھیوں سمیت ایک فوجی آپریشن کے دوران گرفتار کرلیا۔اسلم فاروقی کی گرفتاری سے متضاد اطلاعات ہیں اوربعض اطلاعات کے مطابق انہیں صوبہ ننگرہار کے ضلع اچین سے حراست میں لیا گیا تاہم افغان میڈیا نے افغان خفیہ ایجنسی (این ڈی ایس) کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ داعش کے کمانڈراسلم فاروقی کوایک پیچیدہ اور سپیشل آپریشن کے دوران جنوبی صوبہ قندہار میں گرفتارکرلیا گیا۔اسلم فاروقی تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی)کے مرکزی شوریٰ کا اہم رکن اورحکیم اللہ محسود اور طارق آفریدی کا قریبی ساتھی تھا جوکئی سال قبل تحریک طالبان پاکستان کو چھوڑکر داعش کا افغانستان کے مشرقی صوبہ ننگرہار میں سرپرست بن گیا تھا۔وہ صوبہ ننگرہار کے ضلع اچین کے علاقہ عبدالخیل میں تعینات تھا۔اسلم فاروقی داعش کے کمانڈر ابوسعید باجوڑی کے بعد داعش کے کمانڈر مقرر ہوئے تھے۔وائس آف امریکہ سمیت دیگر غیرملکی خبررساں اداروں کے مطابق اسلم فاروقی کے ساتھ دولت اسلامیہ (داعش)کے دو اہم کمانڈروں سیف اللہ عرف ابوطلحہ اور زاہد عرف معاذ سمیت 19 جنگجوؤں کو حراست میں لیا گیا ہے۔بتایاجاتا ہے کہ افغان خفیہ ایجنسی نے زیرحراست عسکریت پسندوں کی ایک ویڈیو بھی جاری کی ہے جس میں زیرحراست اسلم فاروقی نے اپنے بیان میں عالمی دہشت تنظیم داعش خراساں سمیت دیگر کئی تنظیموں کے ساتھ روابط رکھنے کا اعتراف کیا ہے۔

اسلم فاروقی گرفتار

مزید :

علاقائی -