ٍپاکستان،آسٹریلیا کیخلاف سیریز، انگلینڈ کی منفرد پالیسی دونوں ممالک کیلئے 2الگ الگ ٹیمیں

      ٍپاکستان،آسٹریلیا کیخلاف سیریز، انگلینڈ کی منفرد پالیسی دونوں ممالک ...

  

ٍ لندن (آئی این پی) کورونا وائرس کے نتیجے میں پیدا شدہ صورتحال کے بعد رواں سیزن میں پاکستان اور آسٹریلیا کیخلاف سیریز کیلئے انگلینڈ نے دو ٹیمیں میدان میں اتارنے پر غور شروع کردیا ہے،جو روٹ کی زیر قیادت انگلش ٹیسٹ سائیڈ ویسٹ انڈیز اور پاکستان کا سامنا کرے گی جبکہ اسی دوران ا?ئن مورگن کی کپتانی میں مختصر فارمیٹ کی ٹیم آسٹریلیا کیخلاف کھیلے گی،ای سی بی کے چیف ایگزیکٹو ٹام ہیریسن کا کہنا ہے کہ دوسرے ممالک کے کرکٹ بورڈز کی جانب سے بھرپور تعاون حاصل ہے،شائقین کی گراؤنڈز میں آمد کے حوالے سے فیصلہ آئندہ چند ہفتوں میں کر لیا جائے گا۔تفصیلات کے مطابق انگلینڈ نے رواں سیزن کے دوران ایک ہی وقت میں پاکستان اور آسٹریلیا کیخلاف دو ٹیمیں میدان میں اتارنے کا فیصلہ کرلیا ہے کیونکہ کورونا وائرس کے باعث انگلش سیزن کا قدرے تاخیر کیساتھ 28مئی سے آغاز ہوگا اور وقت کی کمی کو پیش نظر رکھتے ہوئے ای سی بی نے ہنگامی بنیادوں پر منصوبہ بندی شروع کردی ہے۔برطانوی میڈیا کے مطابق انگلینڈ کو جون میں ویسٹ انڈیز کیخلاف تین ٹیسٹ میچوں میں میزبانی کرنی ہے جس کے بعد پاکستان کیخلاف تین ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز کا 30 جولائی سے آغاز ہوگااور ان دونوں سیریز کے دوران جو روٹ کی زیر قیادت انگلش ٹیم میدان سنبھالے گی جبکہ اسی دوران ا?ئن مورگن کی کپتانی میں انگلینڈ کی مختصر فارمیٹ کی ٹیم آسٹریلیا کا سامنا کرے گی جسے ون ڈے اور ٹی ٹونٹی سیریز کیلئے جولائی میں انگلینڈ پہنچنا ہے۔انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ کے چیف ایگزیکٹو ٹام ہیریسن کا کہنا ہے کہ انگلینڈ کے دورے پر آنے والی انٹرنیشنل ٹیمیں لچکداراور تخلیقی صلاحیتوں سے معمور ہی نہیں بلکہ تمام تر حالات سے بخوبی واقف بھی ہیں اور اسی وجہ سے انہیں دوسرے ممالک کے کرکٹ بورڈز کی جانب سے بھرپور تعاون حاصل ہو رہا ہے اور وہ ان حالات کے متعلق پلاننگ کر رہے ہیں جب کورونا وائرس کے اثرات کا خاتمہ ہونے پر قوم مشکلات سے باہر نکل آئے گی۔ان کا کہنا تھا کہ شائقین کے گراؤنڈز میں آنے یا نہ آنے کے بارے میں آئندہ چند ہفتوں کے دوران گفت و شنید کی جائے گی اور اگر ایسا ممکن نہیں ہوا تو شائقین کو کھیل سے منسلک رکھنے کیلئے دیگر طریقے اختیار کئے جا سکتے ہیں جن پر غور کیا جاتا رہے گا۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -