لاک ڈاؤن، مزدور طبقے کے گھروں میں فاقے، زندگی مزید اجیرن

لاک ڈاؤن، مزدور طبقے کے گھروں میں فاقے، زندگی مزید اجیرن

  

لاہور(افضل افتخار)شہر بھر میں لاک ڈاؤن کے باعث ہر طبقہ ہی پریشانی کا شکار ہے مگر مزدور طبقہ جو دیہاڑی پرکام کرتا ہے۔ سب سے زیادہ متاثر ہورہا ہے اس حوالے سے کئے گئے سروے میں لاہور شہر کے مزدوروں نے ان حالات پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ پہلے ہی کام مشکل سے ملتا تھا اور گزارا نہیں ہوتا تھا مگر جب سے لاک ڈاؤن ہوا ہے ہم تو شدید پریشانی کا شکار ہیں اور بالکل بھی کام نہیں ہے۔ لاہور کے مختلف مقامات پر کام کی تلاش میں بیٹھے مزدوروں خلیل، عابد، حفیظ، نفیس، ماجد، پرویز، شاکر، حبیب اللہ،شوکت، دلاور، رؤف،زبیر،نبیل،ساجد اور خالد نے کہا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے ہم کئی روز سے بے روزگار ہیں روز کام کی تلاش میں بیٹھ جاتے ہیں مگر کوئی کام نہیں ملتا کوئی بھی ہمیں کام کے لئے نہیں لے کر جاتا ہر کام بند ہونے کی وجہ سے ہم مزدوری کرنے سے بھی محرو م ہیں اور حکومت بھی ہم پر کوئی توجہ نہیں دے رہی اب تک کوئی امداد نہیں ملی۔ہم نے سنا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے مزدوروں کو بھی کام نہ ملنے پر ریلیف دینے کا اعلان کیا ہے مگر اب تک ہمارے پاس تو کوئی نہیں آیا اور نہ ہی ہمیں معلوم ہے کہ ہم نے کس سے امداد لینی ہے ہمارے گھروں میں فاقے پڑے ہوئے ہیں اور بہت ہی مشکل سے ایک وقت کی روٹی بھی کھانے کو مل رہی ہے اس صورتحال سے ہم بہت پریشان ہیں اور ہم حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ایسے حالات میں ہم کیسے گزاریں کریں ہمارا کوئی پرسان حال نہیں ہے اور امداد ہم تک پہنچائی جائے تاکہ ہم بھی اس مشکل وقت کو گزار سکیں۔ اس حوالے سے مزدور ریحان، عارف، عبید، شوکا، نوید، حارث،منوں خان،شبر،اسد،آصف،ذاکر،بھولا اور منیر نے کہاکہ کرونا کی وجہ سے کام بالکل نہیں ہے اور ہمیں تو کام کے لئے اب جگہوں پر بیٹھنے پر بھی نہیں دیا جاتا اور ہماری فیملی کام نہ ہونے کی وجہ سے بہت مشکل سے دوچار ہے ہم وزیر اعظم پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اس حوالے سے نوٹس لیں اور ہمیں امداد پہنچائی جائے دعوے تو بہت سامنے آرہے ہیں مگر اب کئی روز گزر جانے کے بعد بھی عملی طور پر کچھ بھی ہوتا نظرنہیں آتا ایسے حالات میں زندگی گزارنا بہت مشکل ہے پہلے ہی ہم بہت کم کماتے تھے اور اب وہ بھی ختم ہوگیا ہے ہم پر رحم کیا جائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -