تحقیقاتی رپورٹس نے واضح کردیا بڑے چور کابینہ میں ہیں،جاوید قصور

      تحقیقاتی رپورٹس نے واضح کردیا بڑے چور کابینہ میں ہیں،جاوید قصور

  

لاہور (پ ر)امیرجماعت اسلامی صوبہ پنجاب وسطی و صدر ملی یکجہتی کونسل پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ چینی، آٹا بحران کے حوالے سے تحقیقاتی رپورٹس نے واضح کردیا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کی کابینہ میں بڑے چور،لٹیرے اور منافع خور بیٹھے ہیں۔ ان سب کے ساتھ سخت آہنی ہاتھوں سے نمٹنا وزیر اعظم کے لیے ایک ٹیسٹ کیس بن چکا ہے۔ اب وقت آگیا ہے کہ غریب عوام کے خون پسینے کی کمائی کو لوٹنے والوں کو عبرت کا نشان بنا یا جائے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز منصورہ میں اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ جب سے تحریک انصاف کی حکومت بر سر اقتدار آئی ہے، عوام دو وقت کی روٹی کو بھی ترس گئے ہیں۔ مہنگائی اور بے روزگاری آسمان سے باتیں کررہی ہیں۔ ایک طرف قوم کرونا وائرس سے لڑرہی ہے۔

لاک ڈاؤن کے باعث گھروں میں چولہے ٹھنڈے پڑے ہیں۔ تو دوسری طرف حکومت نے بجلی کے بلوں میں پی ٹی وی فیس 35روپے سے بڑھا کر 100روپے کردی، جس سے عوام پر 21ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا۔کرونا کی روک تھام کے حوالے سے جس اندز میں چین نے بر وقت کام کیا اور وباء پر قابو حاصل کیا، اس انداز کو اختیار کرنے کی ضرورت تھی،مگر بد قسمتی سے حکومتی ترجمان مسلسل غلط بیانی کرتے رہے ہیں۔ ملک میں اس وقت کرونا سے ہلاکتوں کی تعداد45سے تجاوز کرچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم قوم کو برے وقت سے ڈرانے کی بجائے اپنی آئینی و قانونی ذمہ داریاں ادا کریں اور سیاست کو ایک طرف چھوڑ کر بلا تفریق اقدامات کریں تو زیادہ بہتر ہوگا۔ حکومت کرونا سے متعلق مستند اعداد و شمار عوام کے سامنے لائے۔ محمدجاوید قصوری نے اس حوالے سے مزید کہا کہ کرونا وائرس کی وجہ سے غریب مزدوروں کے گھروں میں نوبت فاقوں تک پہنچ چکی ہے۔ حکومتی اقدامات محض زبانی جمع خرچ تک محدو د ہو کر رہ گئے ہیں۔ غریب عوام کو کسی قسم کی کوئی امداد نہیں مل رہی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -