لاک ڈاؤن، پنجاب میں کنٹریکٹ اساتذہ کی تنخواہیں بند ہونے کا خدشہ

  لاک ڈاؤن، پنجاب میں کنٹریکٹ اساتذہ کی تنخواہیں بند ہونے کا خدشہ

  

لاہور(سٹی رپورٹر)پنجاب ٹیچرز یونین کے مرکزی صدر چوہدری سرفراز، سید سجاد اکبر کاظمی، رانا لیاقت علی نے کہا ہے کہ 2014،2015 میں بھرتی ہونے والے ایلیمنٹری، سینئر ایلیمنٹری اور 6 ہزار سے زائد سیکنڈری سکول ایجوکیٹرز کا کنٹریکٹ رواں ماہ اپریل میں ختم ہو رہا ہے جبکہ پنجاب بھر میں ڈسٹرکٹ ایجوکیشن اتھارٹیز نے ان کے کنٹریکٹ میں ایک سال کی توسیع بھی کردی لیکن موجودہ لاک ڈاؤن کی صورتحال میں توسیع شدہ کنٹریکٹ اساتذہ کی تنخواہیں جاری رکھنے کے لئے کمپیوٹر چینج ہر ضلع کے اکاؤنٹ آفس میں جمع کروانا مشکل ہی نہیں بلکہ ناممکن ہے۔ اس ناگہانی صورتحال کے پیش نظر اکاؤنٹنٹ جنرل پنجاب اور ڈسٹرکٹ اکاؤنٹ آفیسرز سے مطالبہ ہے کہ کسی بھی کنٹریکٹ ٹیچر کی تنخواہ بند نہ کریں یا پھر ان کنٹریکٹ اساتذہ کے لئے اپنی تنخواہ کی کمپیوٹر چینج آن لائن بھیجنے کا طریقہ کار وضع کیا جائے تاکہ ان کی تنخواہیں جاری رہ سکیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -