مولانا فضل الرحمن کبھی کشمیر میں ہونے والے مظالم پر بھی آواز بلند کریں،مومنہ وحید

مولانا فضل الرحمن کبھی کشمیر میں ہونے والے مظالم پر بھی آواز بلند ...

  

لاہور(پ ر) چیئر پرسن سٹیڈنگ کمیٹی فار چیف منسٹر انسپیکشن ٹیم مومنہ وحید نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمن کبھی کشمیر میں ہونے والے مظالم پر بھی آواز بلند کریں، وہ کشمیر کمیٹی کے چیئر مین رہے لیکن کبھی انہوں نے کشمیریوں سے اظہار یک جہتی نہیں کیا وہ ہمیشہ اپنی سیاست چمکانے میں مصروف رہے،انہوں نے کہاکہ سلامتی کونسل میں 54 سال بعد کشمیر کا مسئلہ زیر بحث آیا ہے۔ نہتے مظلوم کشمیریوں کی آزادی کی منزل دور نہیں۔ دن اور رات کا کرفیو اور تالا بندی ختم اور کشمیریوں کے بنیادی انسانی حقوق بحال کئے جائیں۔

بھارت سرکاراور اُس کا میڈیا دنیا کو دھوکہ دینے میں مکمل طور پر ناکام رہے ہیں۔نہوں نے کہاکہ ہماری حکومت نے یہ عہد کیا ہے کہ ہم نے ہر حال میں اور ہر قیمت پربھارتی جھوٹ کودنیا کے سامنے بے نقاب کرنا ہے۔ جب سے مقبوضہ کشمیر کو بھارت نے اپنا حصہ قرار دیا ہے وہاں مظالم کی انتہائی ہوگئی ہے، باسٹھ دن سے کشمیروں کو دوائیاں تک دستیاب نہیں،دل کے مریض کو ایمبولینس نہیں ملتی۔ڈائیلیسز کے مریض گھروں میں فوت ہورہے ہیں۔حالت ِ زچگی والی خواتین سے ہسپتال تک جانے کی سہولت چھین لی گئی ہے۔انہوں نے کہاکہ امریکی سینیٹرز کو مقبوضہ کشمیر میں داخلے کی اجازت نہ دینا اِس بات کا ثبوت تھا کہ مودی سرکار دنیا سے کچھ چھپانا چاہتی ہے۔ہم نے انہی سینیٹرز کو یہ دعوت دی ہے کہ وہ کشمیر کے جس کونے میں جانا چاہیں اور جس شخص سے ملنا چاہیں انہیں مکمل آزادی حاصل ہے۔۔ اسی طرح جب مقبوضہ کشمیر میں کرفیو ہے تووہاں لوکل باڈیز کے انتخاب کا ڈھونڈھ کس لئے رچایا جا رہا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -