کرونا سے بچاؤ کیلئے چین کے تجربات سے فائدہ اٹھائینگے: عثما ن بزدار

        کرونا سے بچاؤ کیلئے چین کے تجربات سے فائدہ اٹھائینگے: عثما ن بزدار

  

لاہور(خصوصی رپورٹ)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے چین کے ڈاکٹروں اور ماہرین کے وفد نے ملاقات کی۔ ملاقات میں کرونا وائرس کی وباء سے نمٹنے کیلئے دو طرفہ تعاون اورمشترکہ کاوشوں کو فروغ دینے پر اتفاق کیاگیا۔چینی ڈاکٹروں اور ماہرین کی جانب سے کرونا وباکی روک تھام کیلئے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی قیادت میں صوبائی حکومت کے موثر اقدامات کوسراہاگیا۔ چینی ڈاکٹروں اور ماہرین نے پنجاب حکومت کے حفاظتی اقدامات اور علا ج معالجہ کے ایس او پیز کوموثر قرار دیتے ہوئے کہا کہ پنجاب میں کرونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کیلئے حکومت کے اقدامات بارآور ثابت ہوں گے - پنجاب کے عوام کو کرونا وائرس سے بچانے کیلئے وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے فوری اور تیز رفتاری سے صحیح سمت میں اقدامات کئے ہیں -عوام کے تحفظ کیلئے یہ اقدامات قابل تحسین ہیں -چینی ڈاکٹروں اور چیف نرس نے کرونا وبا سے نمٹنے کیلئے اپنے مشاہدات بیان کئے۔چینی ڈاکٹروں نے کرونا کا پھیلاؤ روکنے کے حوالے سے اپنے تجربات بھی شیئر کئے۔چینی ڈاکٹروں کی جانب سے کرونا وباء کی روک تھام کیلئے حکومت پنجاب کو ہرممکن معاونت کی یقین دہانی کی گئی۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار اور وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے چینی ڈاکٹروں سے مختلف امور پر سوالات کیے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے چینی ڈاکٹروں اور چیف نرس کی جانب سے تعاون کی یقین دہانی پر اظہار تشکرکرتے ہوئے کہا کہ چین پاکستان کا انتہائی قابل اعتماد دوست ہے،جس نے ہر مشکل وقت میں ساتھ نبھایا ہے-چین نے کورونا وائرس پر کم ازکم وقت میں قابو پا کر قابل تقلید مثال قائم کی ہے-کورونا سے بچاؤ اور سدباب کیلئے چین کے تجربات سے فائدہ اٹھائیں گے- انہوں نے کہا کہ کورونا کی وباء پر قابو پانے کیلئے چین کا ماڈل دنیا کیلئے ایک مثال ہے-چینی ڈاکٹروں کے مشورے اور سفارشات پر عمل کریں گے-آزمائش کی گھڑی میں دوست ہی دوست کے کام آتا ہے اور چین نے ایک بار پھر ثابت کیاہے کہ وہ پاکستان کیساتھ ہمیشہ کھڑا رہے گا-کورونا کی وباء سے نمٹنے کیلئے چین کے تعاون کی دل سے قدر کرتے ہیں -چینی ڈاکٹروں اور ماہرین نے مشورہ دیا کہ کورونا وائرس کا پھیلاؤ جلد ازجلد اور کم ازکم جگہ پر روکا جائے-چینی ڈاکٹر مامنگ ہوئی نے کہا کہ گرمی میں بھی کورونا وائرس کے پھیلنے کے امکان کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا -چینی وفد نے کہا کہ سماجی فاصلے کورونا وائرس سے بچاؤ میں اہم کردار ادا کرتے ہیں -کم ازکم 28دن کیلئے لاک ڈاؤن پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے اور 28دن کے بعد محتاط انداز میں مرحلہ وار لاک ڈاؤن کی پابندیاں صورتحال دیکھ کر نرم کی جاسکتی ہیں -چینی وفد کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کے متاثرہ مریض کو گھر میں رہنے کی بجائے ہسپتال یاقرنطینہ مرکز میں رکھنا زیادہ بہتر ہے-مریض کی جان بچانے کیلئے انتہائی ناگریز صورت میں پلازمہ کا استعمال مفید ثابت ہواہے- متاثرہ مریض کیلئے 3اینٹی وائرل ادویات کا استعمال مفید ثابت ہوا۔چینی ماہرین او رڈاکٹروں کے وفد کی قیادت چین کے صوبہ ارورمچی کے ڈاکٹر مامنگ ہوئی نے کی۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد،چیف سیکرٹری، صوبائی سیکرٹریز صحت، اطلاعات اور اعلیٰ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔

عثمان بزدار

لاہور(خصوصی رپورٹ) وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے جوہر ٹاؤن میں ایل ڈی اے آفس کا دورہ کیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کلین اینڈ گرین پاکستان پروگرام کے تحت ایل ڈی اے آفس کے لان میں پودا لگا کر شجر کاری مہم کاآغاز کیا۔وزیراعلی عثمان بزدار نے ایل ڈی اے کی طرف سے پودوں کی افزائش کی نگرانی کے لیے تیار کی جانیوالی موبائل ایپلیکیشن ”گو گرین“ کاافتتاح کیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ”گو گرین“ موبائل ایپلیکیشن ایل ڈی اے کااحسن اقدام ہے۔پودوں کی حفاظت اوردیکھ بھال ہم سب کی مشترکہ ذمہ داری ہے۔”کلین اینڈگرین پاکستان“کی مہم پورے صوبے میں جاری ہے۔کورونا کی وباء پر قابو پانے کے ساتھ دیگر حکومتی امورپر بھی پوری توجہ ہے۔انہوں نے کہا کہ کوروناوائرس کے حوالے سے احتیاطی تدابیر اورحفاظتی اقدامات پرچینی ڈاکٹروں سے سیرحاصل اورمفیدبات چیت ہوئی۔چین کے کامیاب ماڈل سے استفادہ کریں گے۔”گو گرین“ ایپلیکیشن کے ذریعے ایل ڈی اے کنٹرولڈ ایریا میں لگائے پودوں کی جیو ٹیگنگ کی جائے گی۔ مختلف مقامات پر لگائے جانے والے پودوں کی موجودگی اور نشونما کی صورتحال پر نظر رکھی جاسکے گی۔انہوں نے کہا کہ”گو گرین“ ایپلیکیشن کے ذریعے یہ بھی معلوم کیا جا سکے گا کہ کس جگہ پر کس قسم کا پھلدار، پھول دار یا دیگر پودا لگایا گیا ہے۔ شہری بھی پودے لگا کر”گو گرین“ ایپلیکیشن کے ذریعے جیوٹیگنگ کرسکیں گے۔انہوں نے کہا کہ لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کواپنے کنٹرولڈ ایریا میں 15 اپریل تک تین لاکھ پودے لگانے کاہدف دیاگیاہے۔ ایک لاکھ پھلدارپودے جامن، امرود،انجیر اور آم کے لگائے جائیں گے۔ نیم، سکھ چین اور دیگر اینٹی الرجی کے دو لاکھ پودے لگائے جائیں گے۔ ”گو گرین“ ایپلیکیشن ایل ڈی اے کے ڈائریکٹر کمپیوٹر سروسز عبدالباسط قمر اور جی آئی ایس سپیشلسٹ محمد عرفان اور ان کی ٹیم نے تیار کی ہے۔دریں اثناء وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیر صدارت ایل ڈی اے آفس میں اعلی سطح کا اجلاس منعقد ہوا،جس میں ایل ڈی اے کے پراجیکٹس پر پیش رفت،شہریوں کو زیادہ سے زیادہ سہولتیں فراہم کرنے کے اقدامات اور مستقبل کے لائحہ عمل کا جائزہ لیاگیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وباء کے پیش نظرایل ڈی اے نے شہریوں کے ذمے ادائیگیوں کو30اپریل تک موخر کردیاہے اوریہ اقدام شہریوں کو ریلیف دینے کیلئے اٹھایا گیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ جناح ہسپتال کے سامنے سٹیل بریج کو جلد مکمل کیا جائے گااور ایل ڈی اے انصاف ویب پورٹل ایپ لانچ ہونے سے شہریوں کو دفاترکے چکر نہیں لگانے پڑیں گے۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ شہریوں کی درخواستیں آن لائن وصول کرنے کیلئے انصاف پورٹل جلد از جلد لانچ کردیا جائے تا کہ شہری گھر بیٹھے درخواستیں جمع کرواسکیں -فردوس مارکیٹ انڈرپاس کاسنگ بنیاداس ماہ کے آخر میں رکھا جائے گا۔اس منصوبے پر 2ارب روپے لاگت آئے گی۔انہوں نے کہا کہ کمپلیشن سر ٹیفکیٹ کے حصول کیلئے پراسس کو آسان بنایاگیا ہے۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ ایل ڈی اے میں ایسا نظام وضع کیا جائے جس میں شہریوں کے کام کسی سفارش کے بغیر ہو سکیں اوراس مقصد کیلئے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال فائدہ مند ثابت ہوگا۔برکت مارکیٹ سے جناح ہسپتال تک سنگل فری کوریڈوربنایا جائے گا۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ گلبرگ سے بابو صابو موٹروے تک ایلیویٹڈ ایکسپریس وے کے منصوبے کو پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت تعمیر کرنے کا جائزہ لیا جائے۔شاہدرہ سے کالا شاہ کاکو تک جی ٹی روڈ پر ایلی ویٹڈ ایکسپریس وے کی تعمیر کیلئے وزیراعظم پاکستان سے درخواست کی جائے گی۔مون سون سے پہلے لارنس روڈ اور شاہراہ قائد اعظم پر نکاسی آب کیلئے مکمل کئے جانے والے منصوبوں پر رکا ہوا تعمیراتی کام بلا تاخیر دوبارہ شروع کر دیا جائے- انہوں نے کہا کہ ایل ڈی اے کی طرح دیگر ڈویلپمنٹ اتھارٹیزکو بھی عوام کی سہولت کیلئے مزید اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کو صوبے کی دیگر ڈویلپمنٹ اتھارٹیز کیلئے رول ماڈل بنایا جائے گا۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کے کلین اینڈ گرین پروگرام کے تحت لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی طرف سے شہر میں 60لاکھ نئے پودے لگائے جائیں گے۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ 60لاکھ پودے لگانے کا کام ایک سال میں مکمل کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی طرف سے تعمیراتی شعبے کے پیکیج کے نتیجے میں ایل ڈی اے کے ترقیاتی منصوبوں میں ہونیوالی 52کروڑ روپے کی بچت کی رقم کو سڑکوں کی مرمت و بحالی کیلئے استعمال کیا جائے۔ایل ڈی اے کے زیر اہتمام سڑکوں کی تعمیر و مرمت کے منصوبے ترجیحی بنیادوں پر مکمل کئے جائیں گے۔ عوام کی فلاح و بہبود کے منصوبوں کو بروقت مکمل کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ شہریوں کی رہنمائی کیلئے سڑکوں پر روڈز سائن لگانا ضروری ہے۔ وزیراعلیٰ نے سڑکوں پر روڈز سائن لگانے کے کام کو جلد مکمل کرنے کی ہدایت کی اورکہا کہ ہر کام کیلئے وزیراعلیٰ کی جانب دیکھنا درست نہیں - آپ کام کریں اور نتائج دیں، میری پوری سپورٹ آپ کے ساتھ ہے -عوام کو ریلیف دینے کے لئے ہر وہ کام کیا جائے جس کی ضرورت ہے-انہوں نے کہا کہ شاہکام چوک پر ٹریفک جام کا مسئلہ حل کرنے کیلئے فلائی اوورکی تعمیر کے منصوبے پر جلد کام شروع کیا جائے گاجبکہ ارفع کریم آئی ٹی ٹاور سے ملحق پرانی سبزی منڈی کی اراضی کا بہترین استعمال یقینی بنایاجائے گا۔لاہورکے شہریوں کو زیادہ سے زیادہ سہولتیں فراہم کی جائیں گی۔لاہور میں واٹر سپلائی اورسیوریج کے نئے منصوبے شروع کیے جائیں گے۔انہوں نے کہاکہ عوام کو بہترین سروس ڈلیوری کیلئے ایل ڈی اے کو لیڈ لینا ہوگی۔ڈی جی ایل ڈی اے احمد عزیز تارڑنے ایل ڈی اے کے پراجیکٹس،شہریوں کوسہولتیں دینے کیلئے کیے جانیوالے اقدامات اورمستقبل کے لائحہ عمل کے بارے میں بریفنگ دی۔صوبائی وزیرہاؤسنگ میاں محمود الرشید،لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے وائس چیئرمین ایس ایم عمران،ایم پی اے سعدیہ سہیل رانا،ایم پی اے عظمی کاردار،ایڈیشنل چیف سیکرٹری اربنائزیشن وانفراسٹرکچرطاہر خورشید، سیکرٹری خزانہ،سیکرٹری ہاؤسنگ، ڈائریکٹر جنرل ایل ڈی اے احمد عزیز تارڑ،سیکرٹری اطلاعات،وائس چیئرمین واساشیخ امتیاز محمود،چیئرمین پی ایچ اے یاسر گیلانی، انجینئرعامرریاض قریشی اوراعلی حکام بھی اس موقع پر موجودتھے۔

پودا لگایا

مزید :

صفحہ اول -