سپریم کورٹ، قیدیوں کی رہائی سے متعلق کیس کی سماعت آج ہو گی

  سپریم کورٹ، قیدیوں کی رہائی سے متعلق کیس کی سماعت آج ہو گی

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) سپریم کورٹ میں قیدیوں کی رہائی سے متعلق کیس کی سماعت آج ہوگی، چیف جسٹس کی سربراہی میں پانچ رکنی بینچ کیس کی سماعت کرے گا۔ وزارت انسانی حقوق نے جیلوں میں کرونا وائرس سے متعلق اقدامات اور قیدیوں کی تعداد اور گنجائش سے متعلق رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرا دی ہے، پنجاب کی اکتالیس جیلوں میں بتیس ہزار چار سو ستتر قیدیوں کی گنجائش ہے جبکہ پینتالیس تین سو چوبیس قیدی موجود ہیں،سندھ کی چوبیس جیلوں میں تیرہ ہزارپانچ سو اڑتیس قیدیوں کی گنجائش ہے جبکہ سولہ ہزار تین سو پندرہ قیدی موجود ہیں، رپورٹ کے مطابق کے پی کی بیس جیلوں میں چارہزار پانچ سو انیس قیدیوں کی گنجائش ہے جبکہ اس وقت نو ہزار نو سو قیدی موجود ہیں،اسی طرح بلوچستان کی جیلوں میں دوہزار پانچ سو پچاسی قیدیوں کی گنجائش ہے جبکہ دوہزار ایک سو بائیس قیدی موجود ہیں۔رپورٹ کے مطابق پنجاب کی جیلوں قید بچوں کی تعداد نوے ہے،کے پی میں پچاس اور سندھ میں تئیس ہے، اسی طرح پنجاب میں ذہنی امراض میں مبتلا قیدیوں کی تعداد دوسو اٹھانوے، سندھ میں پچاس، کے پی کے میں دو سو پینتیس جبکہ بلوچستان گیارہ ہے۔ رپورٹ کے مطابق کورونا وائرس سے بچاؤ کے اقدامات کے تحت تمام جیلوں میں کورونا وائرس سے آگاہی سے متعلق بینرز آویزاں کئے گئے ہیں اورجن قیدیوں کی عمر پچاس سال سے زیادہ ہے انہیں باقی قیدیوں سے الگ رکھا گیا ہے۔

سپریم کورٹ

مزید :

صفحہ اول -