پاکستان کا بڑا پن، 2بھارتی ریلیف طیاروں کو اپنی حدود سے ڈائریکٹ راستہ فراہم کیا

  پاکستان کا بڑا پن، 2بھارتی ریلیف طیاروں کو اپنی حدود سے ڈائریکٹ راستہ ...

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کا امدادی سامان لے جانے والے 2 بھارتی کارگو طیاروں کو پاکستان ایئر ٹریفک کنٹرولرز نے تیکنیکی معاونت فراہم کی جب کہ بھارتی ریلیف پروازوں کا ایرانی ائرٹریفک سے رابطہ منقطع ہوگیا تھا۔ذرائع کے مطابق کورونا وائرس کا طبی سامان کے ہمراہ کراچی ریجن کی فضائی حدود سے گذرنے والے 2 بھارتی طیاروں کو پاکستانی ائرٹریفک کنٹرولرز نے تیکنیکی معاونت فراہم کی،بھارتی کپتانوں اور پاکستانی ائر ٹریفک کنٹرولرز میں رابطہ رسمی جملوں اور خیرسگالی کے الفاظ سے ہوا۔ایک بھارتی طیارہ ممبئی سے فرینکفرٹ جبکہ دوسرے طیارے نے نیو دہلی سے اوڑان بھری تھی۔فرینکفرٹ کیلئے دونوں ریلیف پروازیں امدادی سامان کی ترسیل پر مامور تھیں۔ سی اے اے کے ائر ٹریفک کنٹرولر نے خیرسگالی کے طور بھارتی طیاروں کو ڈائریکٹ روٹس فراہم کیا۔عام حالات میں کسی طیارے کو براہ راست شارٹ روٹ فراہم نہیں کئے جاتے اور ائر ویز اور نیوی گیشن رولز کو لازمی فالو کرنا پڑتا ہے۔آپ بہت اچھا کام کررہے ہیں، پاکستانی ائیر ٹریفک کنٹرولر کا انڈین پائلٹ کو پیغام،آپ کا بہت بہت شکریہ، انڈین پائلٹ کا پاکستانی ائر ٹریفک کنٹرولر کو جواب۔پاکستانی فضائی حدود میں محو پرواز دو نوں بھارتی بوئنگ 777 اور 787 ساختہ طیاروں کا ایرانی ائر ٹریفک کنٹرولر سے رابطہ نہیں ہو پا رہا تھا جس پرسول ایوی ایشن کے اے ٹی سی نے ایرانی ائر ٹریفک کنٹرولرسے لینڈ لائن کے ذریعے رابطہ کیا اور بھارتی طیاروں سے متعلق آگاہ کیا کہ ان کے پائلٹ سے رابطہ کر لیں جس پر ایرانی اے ٹی سی نے بھارتی پائلٹ سے رابطہ کرکے انہیں ایک ہزار کلو میٹر کا براہ راست روٹس فراہم کیا۔ذرائع کے مطابق دونوں بھارتی پائلٹ نے پاکستانی ائر ٹریفک کنٹرولر کی جانب سے مکمل تعاون اور رہنمائی فراہم کر نے اور رویے کو سراہتے ہو ئے شکریہ بھی ادا کیا۔

پاکستان کی مدد

مزید :

صفحہ اول -