APNS کا بقایاجات ادائیگی کے حکومتی نوٹیفکیشن پر اظہار تحفظات

APNS کا بقایاجات ادائیگی کے حکومتی نوٹیفکیشن پر اظہار تحفظات

  

کراچی (خصوصی رپورٹ)آل پاکستان نیوز پیپر سوسائٹی (اے پی این ایس) نے تین اپریل 2020 ء کو وزارت اطلاعات کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن پر اپنے تحفظات کا اظہارکیا ہے۔ نوٹیفکیشن میں حکومتی اشتہارات سے وابستہ اور اشتہاری بلوں کی ادائیگی کے نئے طریقہ کار کے حوالے سے آگاہ کیا گیا ہے۔ حمید ہارون صدر اور سرمد علی سکریٹری جنرل اے پی این ایس نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ مرکزی ایڈورٹائزنگ پالیسی کے مسودہ میں جو طریقہ کارتجویز کیا گیا تھااسے حتمی شکل دینے کیلئے سٹیک ہولڈرز(اے پی این ایس، پی بی اے اور پی اے اے) سے مشاورت کی گئی نہ ہی وزارت اطلاعات کی جانب سے مشاورتی اجلاس بلایا گیا۔اے پی این ایس اس بات کا دوبارہ اعادہ کرتا ہے کہ وزارت اطلاعات نے جو نوٹیفکیشن جاری کیا وہ وزارت کا یک طرفہ فیصلہ ہے۔ سٹیک ہولڈرز سے مشاورت کا عمل بے معنی ہے کیونکہ وزارت پہلے ہی ڈرافٹ کو لاگو کرنے کا فیصلہ کر چکی تھی جو کہ پریس کی آزادی کیساتھ سراسر نا انصافی ہے۔اے پی این ایس نے اپنے بیان میں کہا ہے کہا کہ تجویز کردہ میکانزم موجودہ حالات میں ممکن ہی نہیں ہے۔اگر طے شدہ میکانزم کو لاگو کرنے کی کوشش کی گئی تو ادائیگیوں کے حوالے سے اشتہاری ایجنسیاں اپنی ذمہ داری سے بری الذمہ ہو جائیں گی۔

تحفظات

مزید :

صفحہ اول -