برطانوی وزیراعظم ہسپتال داخل،گرل فرینڈ میں بھی کرونا وائرس کی تشخیص

        برطانوی وزیراعظم ہسپتال داخل،گرل فرینڈ میں بھی کرونا وائرس کی تشخیص

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)برطانیہ کے وزیراعظم بورس جانسن کو طبیعت زیادہ خراب ہونے پر ہسپتال داخل کرا دیا گیا ہے جہاں ان کے مزید ٹیسٹ کئے جائیں گے،یاد رہے کہ 11 روز قبل بورس جانسن میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی،دوسری طرف برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کی حاملہ منگیتر کیری سائمنڈز بھی کرونا وائرس کا شکار ہو گئی ہیں۔سا ئمنڈز نے خود سوشل میڈیا پر یہ بات افشا کی ہے کہ نہ صرف یہ کہ وہ خود کورونا وائرس میں مبتلا ہیں بلکہ وزیراعظم جانسن کو بھی انہی کی وجہ سے قرنطینہ میں جانا پڑا۔ 32سالہ کیری سائمنڈز نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر گزشتہ روز بتایا کہ ”مجھ میں کورونا وائرس کی علامات ہیں اور میں نے گزشتہ ہفتہ بیڈ پر گزارا ہے۔“کیری نے لکھا کہ ”میری علامات بہت واضح ہیں چنانچہ مجھے ٹیسٹ کروانے کی ضرورت نہیں ہے۔ 7دن گزرنے پر مجھ میں وائرس کی علامات کافی بڑھ چکی ہیں۔ تاہم میں وائرس کی وجہ سے پریشان نہیں ہوں بلکہ خود کو کافی مضبوط محسوس کر رہی ہوں مگر میں حاملہ ہونے کی وجہ سے میں زیادہ پریشان ہوں اور دیگر حاملہ خواتین سے بھی کہتی ہوں کہ وہ وائرس سے بچا? کی ہدایات پر سختی سے عمل کریں۔“ وزیراعظم بورس جانسن نے کل 7دن کے قرنطینہ کے بعد باہر آنا تھا لیکن انہوں نے ارادہ منسوخ کر دیاہے اورایک ویڈیو کے ذریعے بتایا ہے کہ اب بھی انہیں بخار ہے،چنانچہ حکومتی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے وہ کچھ دن اور قرنطینہ میں ہی رہیں گے۔واضح رہے کہ برطانیہ میں اب تک وائرس کے 41ہزار 903کیس سامنے آ چکے ہیں اور 4ہزار 313اموات ہو چکی ہیں۔

برطانوی وزیراعظم

مزید :

صفحہ اول -