ٹاسک فورس کورونا کے پھیلاء روکنے کیلئے کام کر رہی ہے: ناصر شاہ

    ٹاسک فورس کورونا کے پھیلاء روکنے کیلئے کام کر رہی ہے: ناصر شاہ

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ کے وزیر اطلاعات و بلدیات، ہاؤسنگ و ٹاؤن پلاننگ، مذہبی امور، جنگلات و جنگلی حیات سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ وزیراعلی سندھ روزانہ کی بنیاد پر کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو صوبے میں روکنے کے حوالے سے بنائی گئی ٹاسک فورس کی صدارت کرتے ہیں جس میں صحت، ڈیزاسٹرمنیجمنٹ اور دیگر متعلقہ اداروں کے حکام شرکت کرتے ہیں۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ یہ ٹاسک فورس اسی دن بنا دی گئی تھی جس دن صوبے میں کرونا وائرس کا پہلا مریض سامنے آیا تھا۔ اپنے ویڈیو پیغام میں سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ صوبے میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال کے بعد جو بھی فیصلہ لیتے ہیں جس میں لاک ڈاؤن کا فیصلہ بھی شامل ہے یہ تمام فیصلے صحت اور دیگر شعبوں کے ماہرین سے طویل مشاورت کے بعد کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ کی ٹاسک فورس دن رات کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے کام کر رہی ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ طب کے شعبے کے ماہرین کے مطابق کرونا وائرس سے متاثر ہونے والے لوگوں کی تعداد 25 اپریل تک پچاس ہزار تک جا سکتی ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ وفاق نے کرونا وائرس کے پھیلا ؤکو روکنے کے لیے بہت دیر سے اقدامات لینا شروع کیے۔ ان تمام ڈاکٹرز، نرسز اور پیرا میڈیکس جوکہ کرونا وائرس کے متاثرہ مریضوں کو براہ راست دیکھ رہے ہیں کی حفاظت کے حوالے سے بات کرتے ہوئے سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ اب تک جتنی بھی سیفٹی کیٹس حکومت کو موصول ہوئی تھی وہ ڈاکٹرز نرسز اور پیرا میڈیکس کو فراہم کر دی گئی ہیں جبکہ مزید سیفٹی کٹس بھی منگوالی گء ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ صوبے میں کرونا وائرس کے مزید 12 مریض صحت یاب ہوگئے ہیں اس طرح صحت یاب ہونے والے مریضوں کی کل تعداد 86 ہوگئی ہے۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ کو ہدایت کی ہے کہ وہ کرونا وائرس کے پھیلا کو روکنے کے حوالے سے جو بھی اقدام لیں اس سے وفاقی حکومت کو بھی آگاہ رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین پی پی پی کی یہ واضح ہدایت ہے کہ وفاقی حکومت کے ساتھ مل کر کام کیا جائے۔ سید ناصر حسین شاہ نے ایک دفعہ پھر واضح کیا کہ صوبے بھر میں یا بارڈر پر گڈز ٹرانسپورٹ کے چلنے پر کسی بھی قسم کی کوئی پابندی نہیں لگائی گئی ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ کھانے پینے کی ضروری اشیا فراہم کرنے والی گاڑیوں پر لاک ڈاؤن کے پہلے دن سے کسی بھی قسم کی کوئی پابندی نہیں ہے اور وہ روزانہ کی بنیاد پر کھانے پینے کا ضروری سامان شہر میں دکانوں پر فراہم کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تاریخ کے اس مشکل وقت میں ہمیں ایک دوسرے پر الزام تراشی سے گریز کرتے ہوئے پوری دلجمعی کے ساتھ ضرورت مندوں کی مدد کرنی چاہیے۔ دریں اثنا صوبائی وزیر اطلاعات و بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ سے اوورسیز ڈاکٹرز والنٹیئرزٹیم کے ارکان نے میں کارونا کے خلاف حکومت سندھ کی جدوجہد میں اپنا حصہ ڈالنے کی گزارش ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات سید ناصر حسین سے اورسیز ڈاکٹرز والنٹیئرز ٹیم کے وفد نے علی ہاؤس کراچی میں ملاقات کی۔ وفد میں کنور محمد علی،محمد ساجد خان اور عاطف علی خان شامل تھے۔ وفد کے شرکا کی جانب سے صوبائی وزیر کو کارونا کے خلاف موثر اور بہترین حکمت عملی اختیار کرنے پر مبارک باد پیش کرتے ہوئے کارونا کے خلاف کام کرنے والے ڈاکٹروں کے لئے خاص طور پر تیار کئے گئے ڈیڑھ سو لباس پیش کئے گئے۔ناصر حسین شاہ نے وفد کے شرکا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کارونا کی وبا کے خلاف حکومت سندھ کی جدوجہد روز بروز تیز ہورہی ہے اور مخیر اداروں، فلاحی تنظیموں کا اس حوالے سے اہم کردار ہے اور حکومت سندھ انسانی خدمات کے ان اقدامات کی تہ دل سے قدر کرتی ہے۔وزیر اطلاعات نے وفد کے شرکا کو حکومتی اقدامات کے حوالے سے بتایا کہ کارونا کی وبا کے نمودار ہوتے ہی وزیر اعلی سندھ نے تمام اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیکر جامع اور مربوط حکمت عملی کے نفاذ کا مرحلہ وار آغاز کردیا تھا جس کی بدولت سندھ میں یہ مرض بڑی تباھی پھیلانے میں کامیاب نہیں ہوسکا۔ناصر حسین شاہ نے کہا کہ ملک کی موجودہ صورت حال پر قابو پانے کے لئے مرکز اور صوبائی حکومتوں کا ایک پیج پر ہونا ضروری ہے اورحکومت سندھ وفاقی حکومت کے کارونا کے خلاف کئے جانے والے تمام اقدمات کی غیر مشروط حمایت کرتی ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات و بلدیات کے مطابق حکومت سندھ کارونا کے خلاف برسر پیکار ڈاکٹروں کو حفاظتی لباس کی فراہمی کے لئے باقاعدہ بجٹ بھی مختص کرچکی ہے اور وزیر اعلی سندھ کی ہدایت پر حفاظتی لباس تیار کرنے والے اداروں سے بھی ترجیحی بنیادوں پر لباس تیار کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔ ناصر حسین شاہ نے بطور خاص حکومت چائنہ کا بھی شکریہ ادا کیا جنہوں نے کارونا کے خلاف فرنٹ لائن پر کام کرنے والے ڈاکٹروں اور پیرا میڈیکل اسٹاف کے بچاوکے لئے حفاظتی لباس تیار کرکے بھیجے اور مخیرحضرات کو بھی خراج تحسین پیش کیا جن کی مدد سے حکومت سندھ اس قدرتی آزمائش سے نبٹنے کے لئے جدوجہد کر رہی ہے۔

مزید :

صفحہ اول -