وزیر اعلی پنجاب کی سنٹرل پی سی آر لیب آمد، روزانہ دو ہزار ٹیسٹ ہونے کاامکان، پنجاب میں 3100ٹیسٹ روزانہ ہورہے ہیں: عثمان بزدار

وزیر اعلی پنجاب کی سنٹرل پی سی آر لیب آمد، روزانہ دو ہزار ٹیسٹ ہونے کاامکان، ...
وزیر اعلی پنجاب کی سنٹرل پی سی آر لیب آمد، روزانہ دو ہزار ٹیسٹ ہونے کاامکان، پنجاب میں 3100ٹیسٹ روزانہ ہورہے ہیں: عثمان بزدار

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے برڈووڈ روڈپر محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر کے زیر اہتمام سنٹرل پی سی آر لیب کا دورہ کیا، اس دوران انہیں بتایاگیاکہ استعداد کار بڑھنے کے بعد سنٹرل پی سی آرلیب میں روزانہ 2000 ٹیسٹ ہوں گے جبکہ وزیراعلیٰ کاکہناتھاکہ پنجاب میں روزانہ مجموعی طور پر 3100سے زائد کورونا ٹیسٹ کئے جا رہے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق سنٹرل پی سی آر لیب میں کورونا ٹیسٹ کے لئے بی ایس ایل لیول تھری پرکورونا ٹیسٹ کئے جاتے ہیں،وزیر اعلی عثمان بزدار نے پرسنل پروٹیکشن ایکیوپمنٹ پہن کر لیب کا دورہ کیا اورکورونا ٹیسٹ کے مختلف مراحل کا مشاہدہ کیا،وزیر اعلی عثمان بزدار نے لیب میں کام کرنے والے عملے سے طریقہ کار دریافت کیا۔

اس موقع پر بزدار نے سنٹرل پی سی آرلیب کے ایکسٹریکشن روم کا معائنہ بھی کیا اور انہیں بریفنگ میں بتایا گیا کہ ایکسٹریکشن روم میں بائیو سیفٹی کیبنٹ کا میں سیمپل کو ٹریٹ کیا جاتا ہے،بائیو سیفٹی کیبنٹ میں ٹیسٹ کرنے والے عملے کو محفوظ بنانے کا اہتمام ہے ، بی ایس ایل لیول تھری لیب میں ہوا کے منفی دباو¿ کے ذریعے ماحول کو صاف رکھا جاتا ہے ،سنٹرل پی سی آرلیب میں دن رات مائیکرواور مالیکیولر بیالوجسٹ کام کررہے ہیں ،مختلف مقامات سے کورونا ٹیسٹ کو کولڈ چین ٹرانسپورٹ کے ذریعے لیب تک پہنچایا جاتا ہے ،لیب میں 6 سے 7 گھنٹے میں کورونا ٹیسٹ کا رزلٹ آن لائن متعلقہ ہسپتال کو بھیج دیا جاتا ہے ،سنٹرل پی سی آر لیب میں 3000 سے زائد کورونا ٹیسٹ کئے جا چکے ہیں ،استعداد کار بڑھنے کے بعد سنٹرل پی سی آرلیب میں روزانہ 2000 ٹیسٹ ہوں گے۔

وزیر اعلی عثمان بزدار نے سیکرٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر اور لیب سٹاف کی خدمات کو سراہا اور ان کاکہناتھاکہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر کے زیر اہتمام بی ایس ایل لیول تھری لیب کا قیام خوش آئند ہے ،پنجاب میں روزانہ مجموعی طور پر 3100سے زائد کورونا ٹیسٹ کئے جا رہے ہیں۔

وزیراعلیٰ پنجاب کاکہناتھاکہ صوبہ بھر میں کورونا کے کیس ملنے کے بعد ان کے سماجی تعلق داروں کو بھی ٹریس کیا جا رہا ہے ،پنجاب میں تا حال 651 کورونا وائرس کے مریض ہیں ،صوبہ بھر میں 2110 افراد کو ٹریس کیا گیا ہے جن میں سے 147 کے مثبت ٹیسٹ آئے ہیں ،صوبہ بھر میں کورونا وائرس کی تشخیص کے لئے 8 ہزار کٹس موجود ہیں، مزید بھی مہیا کریں گے ،پنجاب میں ڈویڑنل لیول پر بی ایس ایل لیول تھری لیب بہت جلد فنکشنل ہو جائیں گی۔

انہوں نے بتایاکہ ملتان، فیصل آباد، گوجرانوالہ، بہاولپور، ڈیرہ غازی اور راولپنڈی میں بی ایس ایل لیول تھری لیب تکمیل کے قریب ہیں ۔ ان کاکہناتھاکہ ڈویژنل بی ایس ایل لیول تھری لیب کے لئے 62 کروڑ روپے جاری ہو چکے ہیں ،پنجاب میں کورونا ٹیسٹ کی استعداد کار 2 ہفتے تک 5 ہزار روزانہ تک لے جائیں گے ،سیالکوٹ، گوجرانوالہ، گجرات اور جہلم میں فیلڈ ہسپتال قائم ہو چکے ہیں ،چینی ڈاکٹروں سے ملاقات سود مند ثابت ہو گی ،چینی ماہرین کے مطابق سماجی فاصلے ہی کورونا سے بچاو¿کا واحد اور موثرذریعہ ہے ،انصاف امداد پیکیج اور احساس پروگرام کے تحت 25 لاکھ افراد کو 12 ہزار روپے دیں گے،کورونا وائرس کی وجہ سے معاشی صورتحال پر پوری نظر ہے ۔ان کاکہنا تھاکہ مختلف علاقوں میں پابندیوں میں نرمی یا سختی کا فیصلہ روزانہ رپورٹس کی بنیاد پر کیا جاتا ہے ،ڈیرہ غازی خان میں متاثرہ ڈاکٹروں کی بھرپور دیکھ بھال کریں گے ،ہر حقدار کو امداد پہنچانے کے لئے پی ڈی ایم اے کے ذریعے تقسیم کی پابندی لگائی گئی ،لاہور میں 25 ہزار نادار خاندانوں میں راشن اور امدادی سامان کے پیکٹ پہنچائے گئے۔

ان کاکہناتھاکہ لاہور میں این جی اوز اور ڈپٹی کمشنر آفس کے اشتراک سے امدادی سامان پہنچایا جائے گا،بری صورتحال میں ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کو قطعا معاف نہیں کروں گا،ذخیرہ اندازی اور گرانفروشی کرنے پر 2 ارب روپے سے زائد کے جرمانے کئے گئے،اضلاع میں ڈپٹی کمشنر اور انتظامیہ پوری طرح متحرک ہے ۔صوبائی وزراء ڈاکٹر یاسمین راشد، فیاض الحسن چوہان، سیکرٹری اطلاعات اور دیگر حکام بھی لیب کے باہر موجود تھے.

ادھروزیر اعلی عثمان بزدار نے پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر کے کمیٹی روم میں میڈیا بریفنگ دی اور نجی سکولوں کی فیس 20 فیصد کم کرنے کا اعلان کیا، وزیر اعلی عثمان بزدار نے محکمہ تعلیم کو اعلان پر عملدرآمد یقینی بنانے کا حکم دے دیا۔ان کاکہناتھاکہ لاک ڈاون کے دوران صوبہ بھر کے نجی سکول پوری فیس نہیں لیں گے،کوئی نجی سکول یکمشت ایک ماہ سے زائد فیس وصول نہیں کرے گا،نجی سکول اساتذہ سمیت دیگر عملے کو ملازمت سے فارغ نہیں کرسکیں گے،نجی سکولوں کے اساتذہ اور دیگر عملے کی ملازمتوں کو تحفظ دیا جائے گا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -