حکومت نے رواں مالی سال کے دوران 751ارب روپے قرضہ لیا ، سٹیٹ بینک

حکومت نے رواں مالی سال کے دوران 751ارب روپے قرضہ لیا ، سٹیٹ بینک

 کراچی (آن لائن) حکومت نے رواں مالیاتی سال یکم سے بائیس جولائی تک پہلے بائیس روز میں سٹیٹ بینک آف پاکستان سے751ارب روپے بطور قرض لئے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق اسٹیٹ بینک نے اپنی حالیہ رپورٹ میں واضح کیا ہے کہ حکومت نے اب کمرشل بینکوں سے لیا گیا قرضہ ادا کرنا شروع کردیا ہے جو کہ508بلین روپے تک پہنچ چکا ہے حکومت کی یہ پالیسی اسکی گزشتہ سال کی پالیسی کے خلاف ہے جب حکومت نے مالیاتی سال کے پہلے بائیس دنوں میں کمرشل بینکوں سے 72بلین روپے بطور قرض لئے تھے ۔ رپورٹ کے مطابق اگرچہ حکومت نے اپنا قرض لینے کا انداز تبدیل کیا ہے۔ اسٹیٹ بینک پھر بھی محتاط ہے اور اس نے30جولائی کو اعلان کردہ انہی حالیہ مانیٹری پالیسی میں شرح سود5.75فیصد میں کوئی تبدیلی نہیں کی۔ مانیٹری پالیسی میں خدشات ظاہر کئے گئے ہیں کہ رواں مالی سال مہنگائی میں اضافہ ہو سکتا ہے جیسا کہ سٹیٹ بینک افراط زر کی مد 4.5فیصد سے5.5فیصد تک رہنے کی توقع کرتا ہے۔ رپورٹ کے مطابق اگر حکومت نے سٹیٹ بینک سے قرض لینے کا سلسلہ جاری رکھا تو مہنگائی میں مزید اضافہ ہو سکتا ہے

مزید : کامرس


loading...