تاجروں کو اچھا کاروباری ماحول مہیا کیے بغیرمعاشی ترقی ممکن نہیں

تاجروں کو اچھا کاروباری ماحول مہیا کیے بغیرمعاشی ترقی ممکن نہیں

لاہور(کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر کے صدر شیخ محمد ارشد نے کہا ہے کہ تاجروں کی ترقی و خوشحالی کے دعوے وعدوں تک محدود رکھنے کے بجائے عملی اقدامات کی اشد ضرورت ہے، مشکل حالات کے باوجود کاروبار کرکے تاجر ملک سے اپنی وابستگی کا ثبوت دے رہے ہیں، وفاقی و صوبائی حکومتوں کو بھی جواباً مثبت ردّ عمل کا مظاہرہ کرنا اور تاجروں کے مسائل حل کرنے چاہئیں۔ ایک بیان میں لاہور چیمبر کے صدر نے کہا کہ مجموعی قومی محاصل کا 90فیصد تاجروں سے حاصل ہوتا ہے جبکہ زلزلے یا سیلاب سے آفت کے وقت بھی تاجر فوری حرکت میں آکر حکومت کا بوجھ بٹاتے ہیں ، اس کے باوجود کاروباری حالات مشکل اور تاجروں کے مسائل بڑھتے جارہے ہیں۔ شیخ محمد ارشد نے کہا کہ ٹیکس وصول کرنے والے عملے کی جانب سے صوابدیدی اختیارات کے غلط استعمال، سمگل شدہ مال کی چیکنگ کے نام پر مارکیٹوں کے باہر ناکوں، ٹیکسوں کے پیچیدہ نظام، ٹیکسوں کی زیادہ شرح، کاروباری امور میں مختلف وفاقی و صوبائی محکموں کی مداخلت، بینکوں سے لین دین پر ودہولڈنگ ٹیکس، بینک اکاؤنٹس تک رسائی ، ٹریفک کے بدترین مسائل اور جرائم نے تاجروں کا کاروبار کرنا محال کررکھا ہے

جبکہ رہی سہی کسر مون سون کے موسم میں شدید بارشوں کے پانی سے پوری ہوجاتی ہے جو مارکیٹوں میں تاجروں کے گوداموں، دکانوں، دفاتر اور انڈسٹریل یونٹس میں داخل ہوکر تباہی اور تاجروں کے لیے مالی نقصان کا سبب بنتا ہے۔

لاہور چیمبر کے صدر نے وفاقی و پنجاب حکومتوں پر زور دیا کہ ٹیکس وصول کرنے والے عملے کے صوابدیدی اختیارات میں کمی لائے اور اسے پابند کیا جائے کہ وہ تاجروں کو بلاوجہ تختہ مشق نہ بنائے، سمگل شدہ مال چیک کرنے کے نام پر ناکے لگاکر تاجروں کو ہراساں کرنے کے بجائے سرحدوں پر مانیٹرنگ سسٹم بہتر کیا جائے تاکہ سمگل شدہ مال ملک میں آہی نہ سکے۔ شیخ محمد ارشد نے کہا کہ بینکوں سے لین دین پر ودہولڈنگ ٹیکس اور ایف بی آر کی جانب سے بزنس اکاؤنٹس تک رسائی کے معاملات پر تاجروں کو بہت زیادہ تحفظات ہیں، ان معاملات پر پارلیمنٹ میں تاجروں کے نمائندوں کی موجودگی میں بحث کی اور موزوں حل تلاش کیا جائے۔ لاہور چیمبر کے صدر نے پنجاب حکومت پر بھی زور دیا کہ وہ خصوصی طور پر مارکیٹ ڈویلپمنٹ پروگرام شروع کرے جس کے تحت مارکیٹوں میں انفراسٹرکچر ، بجلی کا نظام اور نکاسی آب سمیت دیگر مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کیے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ جب تک وفاقی و صوبائی حکومتیں ان اہم مسائل پر قابو پاکر تاجروں کو اچھا کاروباری ماحول فراہم نہیں کریں گی تب تک معاشی ترقی کا حصول ناممکن رہے گا۔

مزید : کامرس


loading...