پاکستان اور بھارت کو دہشتگردی کیخلاف مل کر کام کرنا ہو گا :امریکہ

پاکستان اور بھارت کو دہشتگردی کیخلاف مل کر کام کرنا ہو گا :امریکہ

واشنگٹن (آن لائن)امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان مارک ٹونر نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت کو دہشت گردی کے خاتمے کیلئے مل کر کام کرنا ہوگا پاکستان میں موجود دہشت گردوں کی خفیہ پناہ گاہوں پر تشویش ہے۔ واشنگٹن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مارک ٹونر کا کہنا تھا پاکستان کو اپنے علاقوں میں تمام دہشت گرد گروہوں کیخلاف کارروائی کرنا ہوگی۔ پاکستان نے اپنے کئی علاقوں میں حکومت کی رٹ بحال کی ہے ، دہشت گردی کے خطرے سے نمٹنے کیلئے پاکستان اور بھارت کو مل کر کام کرنا ہوگا۔ ترجمان مارک ٹونر نے کہا ہے کہ امریکا چاہتا ہے کہ دہشت گردی کیخلاف پاکستان اوربھارت تعاون کریں اور پاکستان ان گروپوں کیخلاف بھی کارروائی کرے جو ہمسایہ ممالک پرحملوں میں ملوث ہیں چاہے وہ خود پاکستان کے لیے خطرہ نہ ہوں۔انہو ں نے کہا کہ دہشت گردی دونوں ممالک کے لیے ایک حقیقی خطرہ ہیں۔ پاکستان بلا تفریق تمام دہشت گرد گروپوں کے ٹھکانے ختم کرے۔پاکستان، چین، افغانستان، تاجکستان کی فوجی قیادت کے اجلاس کے حوالے سے مارک ٹونر کا کہنا تھا کہ چین کی جانب سے اس معاملے کو آگے بڑھانا خوش آئند اور مثبت عمل ہے اور امریکا اسے تعمیری سمجھتا ہے۔مارک ٹونر نے مزید کہا کہ خطے کے ممالک دہشت گردی سے متاثر ہیں اسی لیے امریکا چین کی ان کوششوں کو منفی انداز میں نہیں دیکھتا بلکہ اسے ایک مثبت قدم قرار دیتا ہے۔ٹونر نے اس بات پر زور دیا کہ پاکستان بلا تفریق تمام دہشت گرد گروپوں کے ٹھکانے ختم کرے۔ ان کاکہنا تھا کہ پاکستان ان گروپوں کیخلاف بھی کارروائی کرے جو ہمسایہ ممالک پرحملوں میں ملوث ہیں اورایسے گروپوں کے خلاف بھی کارروائی کرے جو خود اس کے لیے خطرہ نہیں۔ مارک ٹونر نے ترکی کے فتح اللہ گولن کی باضابطہ حوالگی کے مطالبے کی تصدیق کی۔

مزید : علاقائی


loading...