شیخوپورہ:معمولی جھگڑے پر اجتماعی بد اخلاقی کا جھوٹا مقدمہ درج

شیخوپورہ:معمولی جھگڑے پر اجتماعی بد اخلاقی کا جھوٹا مقدمہ درج

شیخوپورہ(بیورورپورٹ)تھانہ بھکھی کے علاقہ موضع چار چک رسالہ میں بجلی کی تار توڑنے کے معمولی جھگڑے پر مخالف پارٹی نے پولیس کے ساتھ ساز باز کر کے اجتماعی بد اخلاقی کا جھوٹا مقدمہ درج کروا دیا ،اس بات کا انکشاف موضع چار چک رسالہ کے سینکڑو ں معززین میں شامل محمد ارشد ،معدر حدین ،شیر جٹ ،محمد یٰسین ،عباس علی ،نسیم ،یوسف علی ،شہادت ،محمد اسلم ،محمد ندیم ،جمیل احمد ،محمد ناصر ،مشتاق اور آصف علی سمیت متاثرہ خاندان کے سر براہ لیا قت علی اور شوکت علی نے میڈیا کے نمائندو ں کو بتایا کہ مقدمہ نمبر 356/16بجرم376کی ایف آئی آر 12مئی کو درج ہوئی جبکہ جھوٹے مقدمے میں بد اخلاقی کا شکار کا ڈرامہ رچانیوالی ماریہ کا میڈیکل 16مئی 2016کو ہوا جبکہ پہلے میڈیکل ہوتا ہے اور بعد میں ایف آئی آر درج ہوتی ہے مگر یہاں تو الٹی گنگا بہہ رہی ہے متا ثرین نے مزیدبتا یا کہ مقدمے کے مدعی محمد اصغر کی بیٹیو ں نے گاؤ ں میں بیو ٹی پارلر کی آڑ میں فحاشی کا اڈا کھو ل رکھا ہے جسکی سر پرستی میا ں خان اوڈھ اور آصف لوہار وغیرہ کرتے ہیں اور سادہ لوح گاؤ ں والو ں پر جھوٹی درخوستیں پولیس کو دلوا کر بعد میں ان کا مک مکا بھی خود کروا دیتے ہیں مذکورہ دو نو ں ٹاؤٹ ہمارے پا س بھی آئے تھے مگر ہم نے انہیں رقم دینے سے انکار کر دیا جس سے انہوں نے پولیس سے ساز باز کرکے جھوٹا مقدمہ درج کروا دیا اور ہمارے بیٹے شہزاد کو گرفتار کروا دیا انہو ں نے کہا کہ ڈی این اے رپورٹ آنے کے بعد ساری حقیقت سامنے آجائے گی گاؤ ں کے سینکڑو ں لوگو ں نے پولیس اور ٹاؤٹو ں کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب میا ں شہباز شریف اور آئی جی پنجاب سمیت ڈی پی او شیخوپورہ سے مطالبہ کیا کہ جھوٹا مقدمہ کو خارج کرکے بیوٹی پارلر کی آڑ میں چلنے والا فحاشی کا اڈا بند کر وا دیا جائے۔

تاکہ گاؤ ں کی نئی نسل کو تباہی سے بچایا جاسکے ۔

مزید : علاقائی


loading...