محافظ ہی چور بن گئے،قومی خزانے کو اربوں کا ٹیکہ

محافظ ہی چور بن گئے،قومی خزانے کو اربوں کا ٹیکہ

لاہور(ارشد محمود گھمن//سپیشل رپورٹر)صوبائی دارالحکومت سمیت پنجاب بھر کے تمام اضلاع میں صوبائی اداروں کے کرپٹ افسران کی چاندی ،محتسب پنجاب کے تحصیل،ضلع کی سطح پربنائے جانے وا لے ایڈوائزربھی کرپٹ با اثر افسران جن کی مبینہ کرپشن کی وجہ سے قومی خزانہ کو سالانہ اربوں رو پے کا نقصان اٹھانا پڑتا ہے کرپشن کی نشاندہی کرنے میں ناکام رہے، زیادہ تر شکایات، سی اینڈ ڈبلیو،پبلک ہیلتھ انجینئرنگ ڈیپارٹمنٹ،لوکل گورنمنٹ ،ریونیو،پنجاب پولیس کے متعلق درج کی گئیں مگر کسی بھی اہم گریڈ کے آفیسر کی کرپشن کا تعین نہ کیا جاسکا ہے واضح رہے کے حکومت کی طرف سے اس ادارے کی مظبوطی اور نچلی سطح پر عوام کو انصاف فراہم کرنے کے لئے اضافی فنڈز کا استعمال تو کیا گیا ہے مگر آج بھی ہزاروں سائلین بر وقت انصاف نہ ملنے کی وجہ سے در بدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہو گئے ہیں،باوثوق ذرائع سے معلوم ہوا ہے کے سابق محتسب پنجاب جاوید محمود نے صوبائی اداروں کے کرپٹ افسران کے گھراؤ اور عوام کو فوری سستا انصاف فراہم کرنے کے لئے تحصیل،ضلع کی سطع پر ایڈ وائزر مقرر کئے گئے جن کو عوام کی طرف سے صوبائی اداروں کے کرپٹ افسران کی کرپشن کے متعلق ہزاروں درخواستیں بھجوائی گئیں مگر کسی بھی باا ثرکر پٹ آفیسر کے خلاف کاروائی نہ ہو سکی جبکہ ذرائع نے مزید بتایا کہ صوبائی ادارے جن میں زیادہ کرپشن کر کے قومی خزانہ کو سالانہ اربوں روپے کا نقصان پہنچایا جا رہا ہے ان میں سر فہرست سی اینڈ ڈبلیو، پبلک ہیلتھ انجینئرنگ ڈیپاٹمنٹ اور لوکل گورنمنٹ کے سب انجینئرز،ایس ڈی اوز، ایکسین،ایس ای اور ٹی ایم اوزجیسے بڑے بڑے افسران شامل ہیں جنہوں نے حکومت کی طرف سے اربوں روپے کے جاری ترقیاتی منصوبوں میں ناقص مٹیریل کا استعمال کر کے من پسند ٹھکیداروں کے ذریعے کروڑوں روپے خرد برد کر کے قومی خزانہ کو اربوں روپے کا نقصان پہنچایا ہے کیخلاف درخواستوں پر کوئی کاروائی نہ کی گئی ہے بلکہ ایسی درجنوں درخواستوں کو داخل دفتر کر دیا گیاہے ذرائع نے بتایا کے اس وقت بھی ایسی سینکڑوں درخواستیں تحصیل،ضلع کی سطع پر ردی کی ٹوکری کی نذر ہیں کاروائی نہ ہونے کی وجہ سے ایسے کرپٹ افسران اپنی سیٹوں پر رعب جمائے بیٹھے ہیں ذرائی کے مطابق نئے محتسب پنجاب نجم سعید نے لاہور سمیت پنجاب بھر کے ایڈوائزر صاحبان کی کارکردگی کے حوالے سے رپورٹ مرتب کی ہے جس کے بعد ادارہ محتسب پنجاب بقاعدہ طور پر ایسے کر پٹ افسران کے خلاف کاروائی کے لئے اپنا دائرہ کار وسیع کر کے عوام کو بروقت انصاف فراہم کرنے میں پیش پیش ہو گا۔

مزید : صفحہ آخر


loading...