پاکستانی ہیلی کاپٹر کا عملہ ہمارے پاس محفوظ ہے ،افغان طالبان ،عملے کی بازیابی کیلئے تعاون کرینگے اشرف غنی کی راحیل شریف کو یقین دہانی

پاکستانی ہیلی کاپٹر کا عملہ ہمارے پاس محفوظ ہے ،افغان طالبان ،عملے کی ...

راولپنڈی،اسلام آباد، کابل، ماسکو (مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب حکومت کے افغانستان میں ہنگامی لینڈنگ کرنیوالے ہیلی کاپٹر اور عملے کی بحفاظت واپسی کیلئے پاک فوج کے سپہ سالار جنرل راحیل شریف نے افغان صدر اشرف غنی کو ٹیلی فون کیا ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ عملے کی جلداور بحفاظت واپسی یقینی بنائی جائے جس پر افغان صدر نے ہرممکن تعاون کی یقین دہانی کرادی۔آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف کے ٹیلی فون پر افغان صدر نے ہرممکن تعاون کی یقین دہانی کرادی ہے۔ دوسری طرف ایکسپریس ٹربیون کے مطابق طالبان نے بتایاہے کہ ہیلی کاپٹر کا عملہ ان کی تحویل میں اور محفوظ ہے تاہم ان مغویوں کے مستقبل کا فیصلہ طالبان کی اعلیٰ قیادت کرے گی۔وزیر اعظم نواز شریف نے افغانستان میں کریش لینڈنگ کرنیوالے صوبائی حکومت کے ہیلی کاپٹر عملے کی بازیابی کیلئے تمام وسائل استعمال کرنیکی ہدایت کردی۔افغان صوبے لوگر میں پنجاب حکومت کے ہیلی کاپٹر کے لاپتہ ہونے پر ان کا کہنا تھا کہ افغانستان سے تمام افراد کی باحفاظت بازیابی کی درخواست کر دی ہے اور افغانستان میں متعلقہ حکام سے مسلسل رابطے میں ہیں۔ وزیر اعظم نواز شریف نے مزید کہا کہ متاثرہ ہیلی کاپٹر میں سوار افراد کے بارے میں فکر مند ہیں اور ان کی باحفاظت بازیابی کیلئے تمام وسائل استعمال کیے جائیں۔دوسری طرف طالبان کے سینئر کمانڈر نے تصدیق کر تے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت کے ہیلی کاپٹر میں سوار عملے کے تمام افراد ان کی تحویل میں ہیں اور بالکل محفوظ ہیں۔سینئر طالبان کمانڈر نے غیر ملکی خبر ایجنسی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عملے کی رہائی سے متعلق پاکستانی حکام سے بات چیت جاری ہے،پاکستان کو افغان یا امریکی حکام سے بات کرنے کا کوئی فائدہ نہیں ہو گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کو پیغام پہنچادیاہے کہ عملہ محفوظ ہاتھوں میں ہے ،ان کا بہت خیال رکھا جارہاہے ،انہیں چائے اور کھانے سمیت تمام سہولیات دی جارہی ہیں۔ روس نے کہا ہے کہ وہ افغانستان میں پاکستانی ہیلی کاپٹر کی ہنگامی لینڈنگ کے بعد اغواء ہونے والے اپنے شہری کی بازیابی کیلئے پاکستان اور افغانستان کے حکام سے رابطے میں ہے ۔ روسی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ہم پاکستانی ہیلی کاپٹر کی ہنگامی لینڈنگ کے بعد ایک روسی شہری کے اغواء سے متعلق معلومات کی تصدیق کررہے ہیں ۔ اس سلسلے میں کابل اور اسلام آباد میں ہمارے سفارتخانے دونوں ملکوں کے حکام کے ساتھ رابطے میں ہیں اور روسی شہری کی رہائی کیلئے جامع اقدامات کیے جارہے ہیں۔

مزید : صفحہ اول


loading...