وزیر اعلٰی کا پیرا نوبالاپایان اور گلی کنڈہ کو شمسی کٹس فراہم کرنے کا اعلان

وزیر اعلٰی کا پیرا نوبالاپایان اور گلی کنڈہ کو شمسی کٹس فراہم کرنے کا اعلان

 پشاور( پاکستان نیوز)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے پیرانو بالا پایاں اور کلی کنڈہ کے بجلی سے محروم تین سو گھروں کو پاکستان ٹوبیکو کمپنی کے تعاون سے شمسی کٹس فراہم کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ وہ وزیر اعلیٰ سیکرٹریٹ پشاور میں ایک اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔ صوبائی وزیر میاں جمشید الدین کا کا خیل، سیکرٹری قانون، پاکستان ٹوبیکو کمپنی کے اعلیٰ حکام اور دیگر متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ وزیر اعلیٰ نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت عوام کی محرومیوں کے خاتمے کے لئے صوبہ بھر میں ترقیاتی و اصلاحاتی اقدامات اٹھا رہی ہے۔ شمسی توانائی سے پیدا ہونے والی بجلی کو ملکی توانائی کے بحران کے طور پر وسیع پیمانے پر قبول کیا جا رہا ہے۔ موجودہ حکومت نے خیبر پختونخوا کے بجلی سے محروم علاقوں کو روشن کرنے کا تہیہ کر رکھا ہے۔ اس مقصد کے لئے ایک طرف صوبے کے بجلی کی پیداوار میں آئینی حق کے لئے جدوجہد کر رہی ہے اور دوسری طرف پبلک پرائیوٹ پارٹنرشپ کے تحت شمسی توانائی کی فراہمی کا انتظام کر رہی ہے ۔ وزیر اعلیٰ نے واضح کیا کہ موجودہ حکومت نے فروری2016 میں پاکستان ٹوبیکو کمپنی کے تعاون سے اس منصوبے کا آغاز کیا تھا۔ منصوبے کے تحت گاؤں پیرانو بالا ، نوشہرہ کے تین سو گھروں کو شمسی کٹس فراہم کی گئیں تھیں جبکہ اب دوسرے مرحلے میں گاؤں پیرانو بالا پایاں اورکلے کنڈہ کے تین سو مکانوں کو شمسی کٹس فراہم کی جائیں گی۔ یہ منصوبہ صوبے کے دیگر کارپوریٹ سیکٹر اور سول سوسائٹی کے لئے نمونے کے طور پر شروع کیا گیا ہے تاکہ وہ بھی آگے بڑھیں اور حکومت کا ہاتھ بٹاتے ہوئے لوگوں کا معیار زندگی بلند کرنے میں اپنا کردار ادا کریں۔

پشاور( پاکستان نیوز)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے ریسٹورنٹ آف انوائس مانیٹرنگ سسٹم کے قیام اور خیبر پختونخوا ریونیو اتھارٹی کے ملازمین کے لئے دو بنیادی تنخواہوں کے برابر اعزازیہ کی منظوری دے دی ہے۔ وہ وزیر اعلیٰ سیکڑٹریٹ پشاور میں خیبر پختونخوا ریونیو اتھارٹی کی پالیسی میکنگ کونسل کے تیسرے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔ صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن میاں جمشیدالدین کا کا خیل، وزیر قانون امتیاز شاہد قریشی، چیف سیکرٹری امجد علی خان اور دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی۔ وزیر اعلیٰ نے اتھارٹی کو مزید فعال بنانے کے لئے 83خالی اسامیوں پر این ٹی ایس کے ذریعے فوری بھرتیاں کرنے اور مزید 70آسامیوں کے لئے سمری بھیجنے کی ہدایت کی ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ صوبائی حکومت این ٹی ایس کے ذریعے بھرتیوں کا پہلے سے فیصلہ کر چکی ہے اس کے لئے بار بار اجازت لینے کی ضرورت نہیں۔ وزیر اعلیٰ نے ہدایت کی کہ اتھارٹی مطلوبہ اہداف کے حصول کے لئے اپنے اختیارات استعمال کرے۔ انہوں نے کہا کہ اداروں کو با اختیار بنانے کا مقصد تیز رفتار ترقی اور شفاف طریقے سے امور کی انجام دہی یقینی بنانا ہے۔ انہوں نے لیگل ایڈویئزر کی تعیناتی ، مراعاتی پیکج اور گاڑی کے لئے بھی سمری بھیجنے کی ہدایت کی ہے۔

پشاور( پاکستان نیوز)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے صوبائی وزراء، مشیران اور معاونین خصوصی کو ہفتے میں کم ازکم چار دن اپنے دفاتر میں لازمی بیٹھنے کی ہدایت کی ہے۔ اگر کسی دوسری مصروفیت کی وجہ سے کوئی دفتر میں بیٹھنے سے قاصر ہو تو عوام کی اطلاع کیلئے دفتر کے دروازے پر واضح الفاظ میں نوٹس آویزاں کرنے کا پابند ہو گا۔ وہ صوبائی اسمبلی سیکرٹریٹ میں پارلیمانی لیڈرز، اراکین کابینہ اور ایم پی ایز کے ساتھ اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔ وزیراعلیٰ نے اراکین صوبائی اسمبلی کو بھی اسمبلی میں حاضری یقینی بنانے اور وقت کی پابندی کرنے کی ہدایت کی۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ اسمبلی میں پوچھے گئے سوالات پر مکمل تیار ی کے ساتھ آئیں جو مسئلہ بغیر بحث کئے حل کیا جا سکتا ہے اسے متعلقہ حکام سے مل کر حل کرلینا چاہیئے اسمبلی فلور پر غیر ضروری بحث سے اجتناب کی جائے تاکہ اجلاس کو زیادہ موثر اور نتیجہ خیز بنایا جا سکے۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ عوامی مسائل کے خاتمے اور خدمات کی آسان فراہمی کیلئے قوانین بنائے جاتے ہیں اسی جذبے کے تحت قوانین میں ترامیم تجویز کرنی چاہئیں۔ موجودہ اتحادی حکومت کے تمام تر اقدامات کا مرکز و محور عوام ہیں۔ عوامی فلاح کے اہداف کو حاصل کرنے کیلئے تمام اتحادی جماعتوں کو اپنا کردار اداکرنا ہو گا۔ مفادات کے ٹکراء کو روکنے کے بل پر گفتگو کرتے ہوئے پرویز خٹک نے کہاکہ پاکستان کی تاریخ میں پہلی دفعہ یہ بل پاس کیا گیا ہے۔ اس بل میں سب سے پہلے انہوں نے خود کو پیش کیا ۔ بنیادی طور پر اسے اوپر کی سطح سے شروع کیا گیا ہے کیونکہ اگر اوپر نظام ٹھیک ہو جائے تو اس کے اثرات نیچے تک نظر آنا شروع ہوجائیں گے۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...