ضلع کونسل چکوال،چیئرمین وں ووائس کا الیکشن دلچسپ ہوگا

ضلع کونسل چکوال،چیئرمین وں ووائس کا الیکشن دلچسپ ہوگا

چکوال (ڈسٹرکٹ رپورٹر) ضلع کونسل چکوال میں چیئرمین اور دو وائس چیئرمینوں کا الیکشن بڑا دلچسپ ہو گا۔ الیکشن کمیشن آف پاکستان کی طرف سے 15 خواتین کی مخصوص نشستوں، 4 کسان، 4 ٹیکنو کریٹ، 4 اقلیتی ممبران کے علاوہ 1 یوتھ کی نشست کا شیڈول آئندہ چند روز میں سامنے آنے کا امکان ہے۔ ضلع کونسل کا ایوان اس وقت 71 چیئرمینوں پر مشتمل ہے جبکہ مخصوص نشستوں پر انتخابات کا مرحلہ مکمل ہونے کے بعد ضلع کونسل کا یہ ایوان 99 ممبران پر مشتمل ہو گا اور چیئرمین ضلع کونسل کی نشست حاصل کرنے کے لئے 50 ممبران کی حمایت کی ضرورت ہو گی۔ موجودہ 71 رکنی ایوان میں پاکستان مسلم لیگ (ن) جس کے اندر 9 پارلیمنٹرینز کے 3 گروپ اپنی مرضی کا چیئرمین لانا چاہتے ہیں اُن کے پاس ممبران کی تعداد 39 ہے جبکہ سردار غلام عباس گروپ کو 22 چیئرمینوں کی حمایت حاصل ہے۔ 5 چیئرمین پی ٹی آئی کے ہیں اور باقی 5 کا تعلق مسلم لیگ (ق) سے ہے۔ ملک نعیم اصغر اعوان کو مسلم لیگ (ن) کا ٹکٹ ملا تو مسلم لیگ (ق) کے 5 ممبران اُن کی حمایت کریں گے کیونکہ ایم این اے سردار ممتاز ٹمن اور مسلم لیگ (ق) کے حافظ عمار یاسر کے درمیان معاملات طے ہیں۔ سردار ممتاز ٹمن میونسپل کمیٹی تلہ گنگ کے چیئرمین کے لئے مسلم لیگ (ق) کے متوقع اُمیدوار ملک نعیم طارق کی حمایت کریں گے۔ ضلع کونسل چکوال کی 28 مخصوص نشستوں پر بھی حصے کے مطابق 65 فیصد مسلم لیگ (ن) اور 35 فیصد دیگر مخالف جماعتوں کے اُمیدوار کامیاب ہوں گے۔ اس حساب سے مخصوص نشستوں میں سے 18 مسلم لیگ (ن) اور 10 دیگر مخالف جماعتوں کو ملنے کا امکان ہے کیونکہ مخصوص نشستوں کے انتخابات متناسب نمائندگی کے تحت ہوں گے۔ چیئرمین اور دو وائس چیئرمینوں کے الیکشن خفیہ رائے شماری سے ہوں گے جس کے نتیجے میں تمام جماعتوں کے اندر توڑ پھوڑ کے امکانات ہیں اور اس حوالے سے مختلف قسم کی لابنگ ہو رہی ہے۔ چیئرمین نعیم اصغر اعوان پی ٹی آئی کے 2 اور سردار گروپ کے 3 چیئرمینوں کا ووٹ لینے کے لئے بڑے پُراُمید ہیں۔ بہرحال مسلم لیگ (ن) کا متاثرہ اور باغی گروپ اگر میدان میں نکل آیا تو وہ سردار غلام عباس گروپ کے ساتھ معاملات طے کر کے مسلم لیگ (ن) کی طرف سے پکی پکائی کھیر خراب کر سکتا ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...