سخا کوٹ میں تحصیل کونسل درگئی کا 21کروڑ 99لاکھ سے زائد کا بجٹ پیش

سخا کوٹ میں تحصیل کونسل درگئی کا 21کروڑ 99لاکھ سے زائد کا بجٹ پیش

 سخاکوٹ(نمائندہ پاکستان) تحصیل کونسل درگئی نے 21 کروڑ 99لاکھ70ہزارروپے سے زائد کاسالانہ بجٹ پیش کردیا گیا۔ سالانہ بجٹ برائے سال 2016/17میں غیر ترقیاتی فنڈز کے لئے 2کروڑ 76لاکھ 8746روپے جبکہ ترقیاتی فنڈز کے لئے 11کروڑ83لاکھ 37ہزار روپے رکھے گئے ہیں۔ تحصیل کونسل کا سالانہ بجٹ اجلاس تحصیل کونسل درگئی میں زیر صدارت کنوینیر حاجی اعظم خان منعقد ہوا جس میں تحصیل ناظم عبد الرشید بھٹو ، ٹی ایم او آرشد علی زبیر ، سیکرٹری طاہر گل ، اپوزیشن لیڈر حاجی افتخار خان ،تمام ممبران اورا قلیتی ممبر گورجندر سنگھ سمیت خواتین ممبران نے شرکت کی ۔اس موقع پر تحصیل ناظم عبد الرشید بھٹو نے سالانہ بجٹ برائے سال 2016/17مبلغ 21کروڑ 99لاکھ ،70ہزار 821روپے پیش کیا جس میں لوکل آمدن بشمول میلہ مویشاں ، بس سٹینڈ ، ٹرک آڈہ ، درگئی مذبحہ خانہ ،سوزوکی سٹینڈ سخاکوٹ وغیرہ کے آمدن کے 4 کروڑ 40لاکھ 59ہزار روپے ہیں جبکہ صوبائی فنڈز کے 12کروڑ 16لاکھ 57ہزار روپے جس میں اکٹرائے شےئر کے 33لاکھ 20ہزار روپے بھی شامل ہیں۔ سالانہ بجٹ میں ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے کے بعد وجودہ تنخواہیں 2کروڑ 8لاکھ1 4ہزار 903روپے سے بڑھ کر 3کروڑ 12لاکھ 30ہزار 947روپے ہو گئی ہے ۔ سالانہ بجٹ میں خواتین کے فلاح و بہبود کے لئے مبلغ 8لاکھ 50ہزار روپے مختص کئے گئے ہیں ۔صوبائی ترقیاتی فنڈز سے آئندہ مالی سال کے متوقع آخراجات کا تخمینہ مبلغ 15کروڑ 86لاکھ 31ہزار 128روپے لگایا جوکہ صوبائی ترقیاتی فنڈز%ADP 30 برائے سال 2016/17مبلغ 11کروڑ 83لاکھ 37ہزار روپے ، جاری ترقیاتی فنڈز ADP30%سال 2015/16مبلغ 3کروڑ 72لاکھ 39ہزار 949روپے اور 8%سکیورٹی ترقیاتی سکیم صوبائی فنڈز 30%ADPسال 2014/15مبلغ 30لاکھ 54ہزار 179روپے پر مشتمل ہے ۔سالانہ بجٹ میں کل آمدن کا تخمینہ برائے سال 2016/17مبلغ 21کروڑ 99لاکھ 821روپے جبکہ سالانہ آخراجات 21کروڑ 74لاکھ 70ہزار 821روپے لگایاگیا ہے ۔ سالانہ بجٹ پیش کرنے کے بعد تحصیل کونسل درگئی نے متفقہ طور پر منطور کرلیا جس پر تحصیل ناظم عبدالرشید بھٹو اور نائب ناظم حاجی اعظم خان نے کونسل ممبران کا شکریہ اداکیا اور انہیں مکمل تعاون کا یقین دلایا ۔ اس موقع پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے اپوزیشن لیڈر حاجی افتخار خان ،قاضی رشید احمد ، سبز علی خان ، عامر سہیل خان ، ارشاد خان مہمند ، پیر قدیم ، راشد حسن ، حمیدنواز خٹک ، احسان اﷲ ، وکیل شاہ ، سارہ سہیل ، فاطمہ بی بی ، تبسم بیگم اور دیگر ممبران نے سخاکوٹ اور درگئی میں صفائی کے انتظامات ،بس اینڈ سوزوکی سٹینڈز ، تفریحی پارک کی قیا م ،سٹریٹ لائٹس سولر سسٹم ، دستکاری سنٹرز ، فنڈز کی مساویانہ تقسیم ، کمیٹیوں کی کارکردگی ،اعزازیے میں اضافی کی تجویز سمیت دیگر اُمور پر تفصیلی بحث کی جس پر تحصیل ناظم عبد الرشید بھٹو ، نائب ناظم حاجی اعظم خان اور ٹی ایم او آرشد علی زبیر نے انہیں جوابات دئیے اورکہا کہ انشاء اﷲ تمام ممبران کیساتھ مکمل تعاون کیا جائیگا اور ماضی میں کئے گئے غلطیوں کا آزالہ کیا جائیگا ۔کونسلر پیر قدیم نے کہا کہ درگئی بازار میں قبرستان کے لئے خریدی گئی آراضی کے سات لاکھ روپے کے چیک تا حال نہیں ملے ہے اور بار بار یاددہانیوں کے باوجود کوئی عمل نہیں ہوا اس لئے مذکورہ چیک فی الفور ریلیز کرنے کے ہدایات جاری کئے جائیں ۔اس موقع پر ترقیاتی سکیموں کے سست روی اور ناقص میٹریل کے استعمال کی شکایت پرناظم عبد الرشید اور نائب ناظم حاجی اعظم خان نے انجینئر ز کو ہدایت کی کہ اسکیموں کی بر وقت تکمیل کو یقینی بنایا جائے اور معزز ممبران کونسل کے شکایات دور کئے جائیں بصورت دیگر عوامی کاموں میں رکاوٹ بننے والے اہلکاروں کیساتھ رعایت نہیں ہو گی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...