ضلع کونسل چارسدہ اجلاس ،اپوزیشن کا لاکھوں ہڑپ کرنے کا الزام

ضلع کونسل چارسدہ اجلاس ،اپوزیشن کا لاکھوں ہڑپ کرنے کا الزام

چارسدہ (بیورورپورٹ ) ضلع کونسل میں عوامی نیشنل پارٹی اور جے یو آئی پر مشتمل اپوزیشن نے ضلع ناظم اور سپیکر پر نو تعمیر شدہ ضلعی سیکرٹریٹ کے فرنیچر اور ڈیکوریشن کیلئے مختص 59لاکھ روپے میں 49لاکھ روپے ہڑپ کئے ہیں۔ضلع ناظم اور سپیکر نے ترقیاتی فنڈز میں 18فیصد کمیشن لے کر قوم کو 90لاکھ روپے کا ٹیکہ لگا دیا۔ دو مہینے پہلے منعقدہ ضلع کونسل کے اجلاس کے منٹس میں ردو بدل کرکے ضلع ناظم اور سپیکر نے نئے گاڑیوں کیلئے رقم کی منظوری ظاہر کی ہے ۔ڈپٹی کمشنر نے کرپشن کے خلاف ایکشن نہ لیا تو نیب اور انٹی کرپشن سے رجوع کریں گے ۔ تفصیلات کے مطابق ضلع کونسل میں اے این پی اور جے یوآئی پر مشتمل اپوزیشن کا ہنگامی اجلاس اے این پی کے ضلعی سیکرٹریٹ میں زیر صدارت اپوزیشن لیڈرقاسم علی خان محمدزئی منعقدہوا ۔ اجلاس میں ضلع کونسل میں اے این پی اور جے یوآئی کے منتخب ممبران نے شرکت کی ۔ اجلاس میں ضلع ناظم فہد ریاض خان اور ضلعی نائب ناظم اعلیٰ /سپیکر مصور شاہ کے غیر قانونی اقدامات اور کرپشن پر تفصیلی غور و خوض کیا گیا ۔ اجلاس میں واضح کیا گیا کہ ضلع کونسل میں غیر قانونی طور پرپیش کردہ بجٹ کے حوالے سے سینئر وکلاء اور ریٹائرڈ ججز سے مشاورت کی جا رہی ہے اور ہر صورت غیر قانونی اور غیر آئینی اجلاس اور بجٹ کو مسترد کیا جائے گا۔اُنہوں نے کہا کہ اکاؤنٹ کمیٹی کے ذریعے کرپشن کے دروازے کھول دیئے گئے ہیں جس میں ضلع ناظم فہد ریاض اور نائب ناظم اعلیٰ مصور شاہ برابر کے شریک ہیں۔ اجلاس میں اس امر پر سخت تشویش کا اظہار کیا گیا کہ نو تعمیر شدہ ضلعی سیکرٹریٹ کے کیلئے مختص 59لاکھ روپے میں 49لاکھ روپے ہڑپ کئے گئے ہیں۔ فرنیچر اورڈیکوریشن میں ناقص اور غیر معیاری میٹریل استعمال کیا گیا ہے ۔ ضلع ناظم نے ترقیاتی فنڈمیں 18فیصد کمیشن لے کر55لاکھ جبکہ ضلع نائب ناظم اعلیٰ نے 35لاکھ روپے کاٹیکہ قوم کو لگایا ۔ اجلاس میں اس امر پر بھی شدیدغم و غصے کا اظہارکیا گیا کہ دو مہینے پہلے ضلع کونسل کا جواجلاس ہوا تھااس کے منٹس ابھی تک اپوزیشن کو فراہم نہیں کئے گئے کیونکہ ضلعی ناظم اعلیٰ اور نائب ناظم اعلیٰ نے اجلاس کے منٹس کو تبدیل کرکے اپنے لئے نئے گاڑیوں کیلئے بجٹ کی منظوری ظاہر کی ہے ۔ اجلاس میں نائب ناظم اعلیٰ مصور شاہ کے حوالے سے کہا گیا کہ اُنہوں نے اپنے حلقہ نیابت میں بعض من پسند لوگوں کے گھر وں میں سرکاری فنڈ سے فرش بندی اور دیگر کام کیاجس پر ڈپٹی کمشنر نے چھاپہ بھی لگایا مگر ابھی تک اس حوالے سے کوئی کاروائی نہیں ہوئی ۔ اجلاس میں ڈپٹی کمشنر چارسدہ طاہر ظفر عباسی سے مطالبہ کیا گیا کہ ضلع ناظم اور سپیکر کے کرپشن اور غیرقانونی اقدامات کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے بصورت دیگر اپوزیشن نیب اور انٹی کرپشن سے رجوع کرے گی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...