تخت لاہور کا دادا گیری نظام مسترد کرتے ہیں‘ خواجہ غلام فرید کوریجہ

تخت لاہور کا دادا گیری نظام مسترد کرتے ہیں‘ خواجہ غلام فرید کوریجہ

مٹھن کوٹ (نامہ نگار) سرائیکستان قومی اتحاد کے زیر اہتمام حضرت خواجہ غلام فریدؒ سائیں کے مزار پر عبادات پر پابندیوں کیخلاف احتجاج مسلسل 56ویں ہفتے میں داخل ایس کیو آئی کے سربراہ وخانوادہ فریدؒ خواجہ غلام فرید کوریجہ کی قیادت میں دھرنا دیا گیا جس میں ہزاروں افراد نے شرکت کی(بقیہ نمبر36صفحہ11پر )

اس دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے ایس کیو آئی کے سربراہ وچیئرمین تحریک فریدؒ پاکستان وخانوادہ فریدؒ خواجہ غلام فرید کوریجہ نے کہا کہ تخت لاہور کی دادا گیری نظام مسترد کرتے ہیں استحکام پاکستان کے ادارے لاہور برانڈ بیوروکریسی نظام اور لاہور کے نسلی تعصب پسند حکمرانوں کی آمریت ختم کرائیں ان کے جرائم پر قومی ادارے کیوں خاموش ہیں جب نہیں رہیں گے سرائیکیوں کو لاہور کے فرسودہ نظام سے نجات احتجاج کا حصہ بنیں اور سڑکوں پر نکلیں پرامن احتجاج سرائیکیوں کو حقوق دلائے گا پابندیاں ختم نہ ہوئیں تو اقوام متحدہ تک جائیں گے وزیر داخلہ سندھ میں صوبائی اسمبلی کی قرارداد اور تحفظات دور کئے بغیر کوئی ایکشن لیں گے تو اس کے اچھے نتائج نہیں نکلیں گے لاہور میں بچے اغوا پانامہ لیکس ،ماڈل ٹاؤن سانحہ ،کانگو وائرس پر حکومت غفلت اور بیڈ گورنیس کے باوجود ان حکمرانوں کو مقدس گائے قرار دینا افسوس ناک ہے کشمیریوں کے حقوق کے علمبردار اپنے ملک میں رہنے والے سرائیکی وسیب کے عوام کے مذہبی ،سیاسی ،سماجی حقوق غصب کررہے ہیں اور حقوق کے وکیل کس طرح بن سکتے ہیں دربار فریدؒ پر پابندیاں ان کے ظلم کا منہ بولتا ثبوت ہے منظور حسین جتوئی ،ناصر سومرو ،الطاف لاکھا ،محمد علی مزاری نے خطاب کیا ۔

غلام فرید کوریجہ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...