مصر کے سابق مفتی اعظم پر فائرنگ،محافظ زخمی

مصر کے سابق مفتی اعظم پر فائرنگ،محافظ زخمی
مصر کے سابق مفتی اعظم پر فائرنگ،محافظ زخمی

  


قاہرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) دہشت گردوں نے علما کرام کو بھی نہ بخشا ،مصر کے سابق مفتی اعظم ڈاکٹر علی جمعہ پر اس وقت فائرنگ کردی جب وہ نماز جمعہ کا خطبہ دینے کیلئے مسجد میں داخل ہوئے۔

تفصیلات کے مطابق مصر کے سابق مفتی اعظم ڈاکٹر علی جمعہ کو قاتلانہ حملے کا نشانہ بنایا گیا تاہم وہ محفوظ رہے۔ یہ واقعہ الجیزہ صوبے کے شہر " اکتوبر سِٹی" کے علاقہ غرب سومید میں واقع مسجدِ "فاضل" میں داخل ہوتے وقت پیش آیا۔

سکیورٹی ذرائع کے مطابق سابق مفتی اعظم نماز جمعہ کا خطبہ دینے کیلئے شہر کی ایک مسجد میں داخل ہو رہے تھے کہ اس دوران مسلح افراد نے ان پر فائرنگ کردی۔ فائرنگ کے نتیجے میں ڈاکٹر علی جمعہ کے ذاتی محافظین زخمی ہوگئے تاہم انہیں کسی قسم کا نقصان نہیں پہنچا۔

سابق مفتی اعظم نے مسجد میں جمعہ کا خطبہ دیا اور نماز بھی پڑھی۔ اس کے بعد وہ وہاں سے روانہ ہوگئے۔ ابھی تک یہ معلوم نہیں ہوسکا کہ حملہ آوروں کو گرفتار کیا گیا ہے یا نہیں۔

ادھر مصر کے عظیم اسلامی مرکز جامعہ الازہر نے ڈاکٹر علی جمعہ پر حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی ہے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...