فرانس کے بار میں آگ لگنے سے 13نوجوان جھلس کرہلاک

فرانس کے بار میں آگ لگنے سے 13نوجوان جھلس کرہلاک
فرانس کے بار میں آگ لگنے سے 13نوجوان جھلس کرہلاک

  


پیرس(مانیٹرنگ ڈیسک)فرانس میں ایک اوردردناک واقعہ پیش آگیا،سالگرہ کی تقریب میں موم بتیوں کی وجہ سے آگ لگ گئی جس سے 13نوجوان جھلس کر ہلاک ہو گئے۔

بی بی سی کے مطابق فرانس کے مغربی شہر روئین میں ایک بار میں سالگرہ کی تقریب ہو رہی تھی جس دوران اچانک آگ بھڑک اٹھی اور 13نوجوان جھلس کر ہلاک جب کہ 6زخمی ہوگئے،ہلاک ہونے والے تمام افراد کی عمریں 18سے 25سال کے درمیان ہیں۔

یہ بھی پڑھیئے۔۔ گرم ہوا کا غبارہ آگ لگنے سے گر گیا، 16افراد ہلاک

فرانسیسی وزیرداخلہ نے بتایا کہ واقعہ کیوبا لبری نامی بار کے بیسمنٹ میں جمعہ اور ہفتے کی درمیانی را ت کو پیش آیا ،ممکنہ طور پر موم بتیوں کی وجہ سے آگ لگی جس کو بجھانے کیلئے فوری طور پر 50سے زائد فائر فائٹرز موقع پر پہنچ گئے جنہوں نے کافی تگ و دو کے بعد آگ پر قابو پایا۔واقعہ کی تحقیقات کا آغاز بھی کردیا گیا ہے۔

یہ بھی پرھئے۔۔۔ فرانس چرچ پر حملہ کرنے والے دہشت گردوں کی ویڈیو جاری

میڈیا رپورٹ کے مطابق ممکنہ طور پر آگ لگنے کی وجہ کیک پر رکھی موم بتیاں ہوسکتی ہیں۔جب کہ ابتدائی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ آگ سیلنگ میں لگی اور نوجوان چھت میں استعمال ہونے والے مادے کے جلنے کے بعد نکلنے والی زہریلی گیس کی وجہ سے ہلاک ہوئے۔

فرانسیسی وزیراعظم مینویل ویلز نے اس حادثے پر گہرے صدمے کا اظہار کرتے ہوئے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ اس سانحے پر گہرا رنج ہے جس نے 13نوجوانوں کی جان لے لی۔

مزید : بین الاقوامی


loading...