اسرائیلی فوج فلسطینیوں کے گدھے پکڑ کر بیچنے لگی

اسرائیلی فوج فلسطینیوں کے گدھے پکڑ کر بیچنے لگی
اسرائیلی فوج فلسطینیوں کے گدھے پکڑ کر بیچنے لگی

  


غزہ(مانیٹرنگ ڈیسک)اسرائیلی فوج کی بزدلانہ کارروائیوں سے کون واقف نہیں ،طاقت کے نشے میں بدمست صیہونی فوجی مظلوم فلسطینیوں کو اذیت دینے کا کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیتے اور کئی مرتبہ ایسی مضحکہ خیز حرکات کر جاتے ہیں کہ بندہ ملامت ہی کر سکتا ہے۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

چند روز قبل اسرائیلی فوج کی ایک ایسی حرکت سامنے آئی ہے جس پر لوگوں نے صیہونی ریاستی فوج پر تنقید کیساتھ ساتھ اسے لالچی اور غریب فوج بھی قرار دیا ہے۔ہوا یہ ہے کہ اسرائیلی فوج نے مقبوضہ مغربی کنارے کی وادی اردن میں کھیتوں میں چرتے ہوئے یا ادھر ادھر بھٹکنے والے غریب فلسطینیوں کے گدھوں کو پکڑ کر اخبار میں ان کی فروخت کیلئے اشتہار دیدیا۔

فلسطینی اخبارات میں دیئے گئے گدھوں کی نیلامی کے اس اشتہار کا عنوان ”چالیس گدھے برائے فروخت“ہے کیونکہ کل چالیس گدھوں کو اسرائیلی فوج نے اپنے قبضہ میں کررکھا ہے۔اور اب وہ فلسطینیوں کے گدھے انہی کو نیلام کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔

روزنامہ پاکستان کی خبریں اپنے ای میل آئی ڈی پر حاصل کرنے اور سبسکرپشن کیلئے یہاں کلک کریں

دوسری جانب اسرائیلی حکام کا دعویٰ ہے کہ انھوں نے یہ گدھے ادھر ادھر آوارہ پھرتے ہوئے پکڑے تھے اور انھیں’ تحفظ عامہ ‘کے پیش نظر اور سڑک حادثات کو کم کرنے کیلئے پکڑ کر ضبط کیا گیا تھا۔

لیکن فلسطینی ان کے اس دعوے کو تسلیم نہیں کرتے ہیں اور ان کا کہنا ہے اسرائیلی فوج اردن کی سرحد کے ساتھ واقع وادی میں ضبطی اور مسماری کی ایک پالیسی پر عمل پیرا ہے۔اس کے تحت فلسطینیوں کے مویشیوں کو پکڑا اور ان کے مکانوں کو مسمار کیا جارہا ہے تاکہ انھیں اس علاقے سے مکمل طور پر بے دخل کیا جاسکے ۔

مزید : بین الاقوامی


loading...