غیر یقینی مسقبل کے خطرات پر پی سی بی حکام کی خاموشی

غیر یقینی مسقبل کے خطرات پر پی سی بی حکام کی خاموشی

 لاہور(سپورٹس رپورٹر)نئی حکومت کی تشکیل کے ساتھ غیر یقینی مستقبل کے خطرات سے دوچار پی سی بی حکام پر خاموشی کا راج ہے اور سینٹرل کنٹریکٹ سمیت دیگر اہم معاملات کے متعلق کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔عام انتخابات کے بعد سے چیئرمین پی سی بی کے عہدے سے متعلق آئے روز نت نئی خبریں گردش کر رہی ہیں لیکن پی سی بی کی جانب سے اس ضمن میں کوئی پالیسی بیان جاری نہیں کیا جا رہا جس سے ان افواہوں کو مزید تقویت مل رہی ہے کہ مستقبل قریب میں پی سی بی میں اہم تبدیلیاں رونما ہو سکتی ہیں۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ نجم سیٹھی اس سے قبل تسلسل کے ساتھ ٹوئٹر پر مختلف پہلوؤں پر اظہار خیال کرنے کے عادی تھے لیکن ان کی جانب سے بھی مکمل خاموشی ہے اور وہ اس بات کی تردید یا تصدیق بھی نہیں کر رہے کہ بطور سربراہ وہ اپنے عہدے پر قائم رہ سکیں گے یا نہیں۔ گزشتہ کئی روز سے سینٹرل کنٹریکٹ سے متعلق خبریں میڈیا کی زینت بنتی رہی ہیں جن میں واضح کیا جاتا رہا ہے کہ ایک سے دو دن میں زیر معاہدہ کھلاڑیوں کے ناموں کا اعلان کردیا جائے گا لیکن مشاورت کا عمل مکمل ہونے کے باوجود اس فہرست کی نقاب کشائی نہیں ہو سکی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈائریکٹر کرکٹ ہارون رشید کے کراچی ٹرانسفر کی وجہ سے بھی بعض اہم معاملات تاخیر کا شکار ہوئے ہیں ۔

اور ایشیاء کپ کیلئے ممکنہ اسکواڈ،کیمپ کے آغاز اور قومی پلیئرز کی جانب سے دو لیگز میں شرکت کی پابندی سے متعلق تشویش پر بھی کسی قسم کی کوئی وضاحت نہیں کی جا سکی ہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی